ریسٹورنٹس ملازمین کا لاہور میں احتجاج، سڑکیں بند، شہری اور مریض خوار

ریسٹورنٹس ملازمین کا لاہور میں احتجاج، سڑکیں بند، شہری اور مریض خوار
 ریسٹورنٹس ملازمین کا لاہور میں احتجاج، سڑکیں بند، شہری اور مریض خوار

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) پنجاب میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر سمارٹ لاک ڈاﺅن اور دیگر پابندیاں سخت کر دی گئی ہیں جس کے پیش نظر کاروباری اوقات بھی محدود کر دیئے گئے ہیں لیکن ریسٹورنٹ ملازمین نے اس نازک صورتحال کو سمجھنے کی بجائے  احتجاج کرتے ہوئے گلبر گ کی مرکزی شاہراہ کو بلاک کر دیا اور شہریوں کے ساتھ بدتمیزی کرتے رہے جبکہ کورونا ایس او پیز کی کھلی خلاف ورزی کرتے ہوئے دیگر شہریوں کی زندگیوں کو بھی خطرے میں ڈالا گیا۔

تفصیلات کے مطابق لبرٹی کے قریب ریسٹور نٹ ملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے سڑک کو بلا کر دیا جس کے باعث سڑک پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں اور جب شہریوں نے جانے کیلئے راستہ مانگا تو نوجوان لڑکے بدتمیزی پر اتر آئے اور گاڑیوں کو نقصان پہنچانے کی بھی کوشش کی ۔ ہجوم میں ایمبولینس بھی پھنسی رہی جو کہ مریض کو لے جارہی تھی جسے گزرنے کی بھی اجازت نہیں ملی ۔

یادرہے کہ کورونا وائرس کی تیسری لہر جاری ہے جسے شدید خطرناک قرار دیا جارہاہے  اور روزانہ اڑھائی ہزار تک  نئے مریض سامنے آنا شروع ہوگئے لیکن اس کے باوجود بھی کورونا ایس او پیز کی مظاہرین کی جانب سے کھلی خلاف ورزی کی گئی ۔

یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ چند دن قبل بھی ریسٹورنٹ مالکان کی جانب سے لبرٹی میں احتجاج مظاہرہ کیا گیا تھا آج ایک مرتبہ پھر سے سڑکوں کو بلاک کرنے کا سلسلہ شروع کر دیا گیا  ہے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -