کیا واقعی ڈاؤن سنڈروم کا شکار اس بچے کے گردے نکال کر اسے پھینک دیا گیا؟ سوشل میڈیا پر وائرل تصویروں کی حقیقت سامنے آگئی

کیا واقعی ڈاؤن سنڈروم کا شکار اس بچے کے گردے نکال کر اسے پھینک دیا گیا؟ سوشل ...
کیا واقعی ڈاؤن سنڈروم کا شکار اس بچے کے گردے نکال کر اسے پھینک دیا گیا؟ سوشل میڈیا پر وائرل تصویروں کی حقیقت سامنے آگئی
سورس: Social Media

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) گزشتہ کچھ روز سے سوشل میڈیا پر ڈاؤن سنڈروم سے متاثرہ ایک بچے کی تصاویر تیزی سے وائرل ہو رہی ہیں جس کے بارے میں یہ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ اس کے گردے نکال کر اسے سڑک پر پھینک دیا گیا۔

سوشل میڈیا صارفین نے اس بچے کا نام عبید بتایا اور دعویٰ کیا کہ یہ جناح ہسپتال میں زندگی اور موت کی جنگ لڑ رہا ہے۔ اس حوالے  سے جناح ہسپتال کی ڈائریکٹر ڈاکٹر سیمی جمالی کا کہنا ہے کہ گردے نکالنے کی خبروں میں کوئی حقیقت نہیں ہے ۔ بچے کے جسم پر گردے نکالنے کا کوئی نشان نہیں ہے۔

ڈاکٹر سیمی جمالی نے ویب سائٹ انڈیپنڈنٹ اردو سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ بچے کا سڑک حادثہ ہونے کے بعد اس کے سر پر چوٹ لگی تھی، وہ اس وقت بیہوشی کی حالت میں جناح ہسپتال کراچی میں زیر علاج ہے جہاں ڈاکٹرز اس کی جان بچانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -