آدمی نے بیوی کو قتل کرکے لاش کو صوفے پر بٹھادیا، پھر اپنے بچوں سے ایسی بات کہہ دی کہ چالاکی پر کوئی بھی حیران رہ جائے

آدمی نے بیوی کو قتل کرکے لاش کو صوفے پر بٹھادیا، پھر اپنے بچوں سے ایسی بات کہہ ...
آدمی نے بیوی کو قتل کرکے لاش کو صوفے پر بٹھادیا، پھر اپنے بچوں سے ایسی بات کہہ دی کہ چالاکی پر کوئی بھی حیران رہ جائے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں گزشتہ کرسمس کے روز ایک آدمی کی طرف سے اپنی بیوی کو قتل کیے جانے اور اپنی بچوں کو ایسی بات کہے جانے کی خبر سامنے آئی ہے کہ سن کر روح کانپ اٹھے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق 39سالہ سفاک شخص کا نام ولیم ویلیس بتایا گیا ہے جس نے اپنی 27سالہ بیوی زازیل پریسٹن کو قتل کرکے اس کی لاش سہارے کے ساتھ صوفے پر اس طرح بٹھا دی جیسے وہ زندہ ہو۔

ملزم نے اپنے بچوں سے کہا کہ ”تمہاری ماں نے زیادہ شراب پی رکھی ہے اور اس کی وجہ سے غنودگی کی حالت میں ہے۔ تم اس کے سامنے گفٹ کھول لو۔“بچے باپ کی اس بات پر اپنی مردہ ماں کو زندہ سمجھ کر اس کے سامنے کرسمس پر ملنے والے تحائف کھولتے رہے۔ پولیس کے مطابق ملزم نے خاتون کو شراب نوشی کے دوران جھگڑا ہونے پر اٹھا کر ہوا میں اچھال دیااور وہ شیشے کی میز پر آ گری۔سر میں چوٹ لگنے سے وہ بے ہوش ہو گئی اور اسی بے ہوشی میں اس کی موت واقع ہو گئی۔دوسری طرف ملزم کا کہنا ہے کہ اس کی بیوی خودنشے کی زیادتی کی وجہ سے میز پر گری۔عدالت میں ملزم کے خلاف مقدمے کی کارروائی جاری ہے۔ 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -