سکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ میں میرے الزامات ثابت ہو گئے،اکبر ایس بابر

 سکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ میں میرے الزامات ثابت ہو گئے،اکبر ایس بابر

  

 اسلام آباد (این این آئی)حکمراں جماعت پاکستان تحریکِ انصاف کے منحرف رکن اکبر ایس بابر نے وزیرِ اعظم کو چیلنج کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان آج بھی میرے ساتھ لائیو ٹی وی پر بحث کر لیں۔الیکشن کمیشن آف پاکستان کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اکبر ایس بابر نے کہا کہ آج بھی آپ نے درخواست دائر کی کہ اکبر ایس بابر کو کیس سے الگ کریں۔انہوں نے کہاکہ آج بھی کیس میں آپ نے التواء کی کوشش کی، کیس کو التواء میں ڈالنے کیلئے مختلف بہانے تلاش کیے گئے۔اکبر ایس بابر نے مطالبہ کیا کہ وزیرِ اعظم عمران خان کو استعفیٰ دینا چاہیے، اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ میں میرے الزامات ثابت ہو گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے سماعت کی اگلی تاریخ 17 مارچ رکھی ہے، ہم غیر ملکی فنڈنگ کیس کی سماعت سے مطمئن ہیں۔پی ٹی آئی کے منحرف رہنما نے کہا کہ اب غیر ملکی فنڈنگ کیس کے فیصلے کا وقت آ گیا ہے، قوم اب مزید انتشار برداشت نہیں کر سکتی۔انہوں نے کہاکہ حکومت ملک کو انتشاری کیفیت میں لے گئی ہے، حکومت وہ کام کرنے جا رہی ہے جس سے خطرات جنم لیں گے۔اکبر ایس بابر کا وزیرِ اعظم سے مخاطب ہو کر کہنا ہے کہ آپ ثبوت نہیں لا سکے کہ میں کسی کے ایماء پر یہ سب کر رہا ہوں، عمران خان آپ نے بھارتیوں سے فنڈنگ کیوں وصول کی؟انہوں نے مطالبہ کیا کہ الیکشن کمیشن جلد اس کیس کا فیصلہ سنائے، اس کیس کا فیصلہ ملک کو انتشار سے بچائے گا۔

اکبر ایس بابر 

مزید :

صفحہ آخر -