ہیلتھ کیئر کمیشن کو خیراتی ہسپتال کیخلاف کارروائی سے روک دیا

ہیلتھ کیئر کمیشن کو خیراتی ہسپتال کیخلاف کارروائی سے روک دیا

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس جوادحسن نے ہیلتھ کیئر کمیشن کو وزیراعظم کے خیراتی ہسپتال کے خلاف کارروائی سے روک دیا عدالت نے 14 اپریل کو فریقین سے رپورٹ اور شق وار جواب طلب کر لیا فاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ ہیلتھ کیئر کمیشن کا اپنے اختیارسماعت سے متعلق شوکت خانم ہسپتال کے اعتراض کوابتدائی سماعت پر نمٹانا غور طلب ہے،عدالت نے شوکت خانم ہسپتال کی درخواست پر عبوری تحریری حکم جاری کردیاہے،درخواست میں موقف اختیارکیا گیاہے کہ نادیہ عامر کی درخواست پر ہیلتھ کیئر کمیشن نے درخواست گزار ہسپتال کے خلاف کارروائی شروع کر رکھی ہے  نادیہ عامر نے شوکت خام ہسپتال پر خون کی غلط رپورٹ جاری کرنے کا الزام لگایا ہے خاتون شہری نادیہ عامر نے جھوٹی درخواست بازی شروع کر رکھی ہے، 2018ء کے واقعہ کی 2021ء میں شکایت کرنا ازخود زائد المیعاد ہو چکا ہے، ہیلتھ کیئر کمیشن نے شوکت خانم ہسپتال کے قابل سماعت ہونے کے اعتراضات کو بلاجواز رد کیا ہیلتھ کیئر کمیشن کو وزیراعظم کے خیراتی ہسپتال کیخلاف شکایت کو ابتدائی سماعت پر ہی خارج کرنا چاہیے تھا عدالت سے استدعاہے کہ شوکت خانم ہسپتال کیخلاف کارروائی کی درخواست پر جاری ہیلتھ کیئر کمیشن کا حکم کالعدم اوروزیراعظم کے خیراتی ہسپتال کو انصاف کی عدم فراہمی کو آئین سے متصادم قرار دیا جائے  درخواست میں یہ استدعابھی کی گئی ہے کہ شوکت خانم ہسپتال کے خلاف شکایت کنندہ پر جرمانہ بھی عائد کرتے ہوئے حتمی فیصلے تک ہیلتھ کیئر کمیشن کو شوکت خانم ہسپتال کے خلاف کارروائی سے روکا جائے۔

روک دیا

مزید :

صفحہ آخر -