پولیس افسر انصاف فراہمی کو یقینی بنائیں‘ آر پی او ملتان 

پولیس افسر انصاف فراہمی کو یقینی بنائیں‘ آر پی او ملتان 

  

ملتان (وقا ئع  نگار) ریجنل پولیس آفیسرجاوید اکبر ریاض نے دفتر میں اردل روم کا انعقاد کیا اور پولیس آفیسران و ملازمین کو دی گئی سزاں کے خلاف اپیلوں کی سماعت کرتے ہوئے موقع پر احکامات جاری کئے ان کا کہنا تھا کہ فرائض منصبی پولیس رولز،قانون(بقیہ نمبر1صفحہ6پر)

 اور ضابطہ کے مطابق اداکرنا ایک پولیس آفیسر کی بنیادی ذمہ داری ہے افسران لوگوں کو فوری انصاف کی فراہمی یقینی بنائیں تا کہ لوگوں میں پولیس بارے تاثر کو بہتر کیاجا سکے انہوں نے مزید کہا کہ بحیثیت پولیس آفیسر فرائض کی ادائیگی میں کوتاہی یا لاپرواہی قابل گرفت ہے اردل روم میں پولیس آفیسران و ملازمین کی اپیلوں کی سماعت کے دوران ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر وہاڑی روبینہ عباس کی جواب طلبی پر جواب تسلی بخش ہونے پر داخل دفتر کیا گیا،سینئر کلرک محمد کامران کودو شوز کاز نوٹسزجواب تسلی بخش نہ ہونے پر سزا تنزلی تنخواہ دو سال/دوسال دی گئی اور معطلی سے فوری طور پر بحال کیا گیا، انسپکٹر انصر علی خانیوال جواب تسلی بخش نہ ہونے پر دو سال سروس ضبطگی کی سزا دی اور معطلی سے فوری طور پر بحال کیاگیا،سب انسپکٹر محمد اسماعیل ملتان کی تین اپیلیں جرمانہ دوہزار،سروس ضبطگی چھ ماہ اور سزا سنشوربروقت اور میرٹ پر نہ ہونے پر خارج کردیں گئیں،سب انسپکٹرمحمد طاہر وہاڑی کے دو شوکازنوٹس جواب تسلی بخش ہونے پر داخل دفتر جبکہ انسپکٹر محمد ذاکر خانیوال اور سب انسپکٹر محمد اسماعیل کے جواب تسلی بخش نہ ہونے پر سنشور کی سزا دی،سب انسپکٹر محمد مزمل لودہراں کے شو کاز نوٹس پر جواب تسلی بخش ہونے پر داخل دفتر کیاگیاجبکہ کنسٹیبل غلام نبی خانیوال کی تنزلی تنخواہ دو سال میرٹ پر نہ ہونے پر خارج کی گئی، سب انسپکٹر محمد عرفان کی دواپیلیں جرمانہ دو ہزار/ دو ہزار میرٹ پر ہونے پر منظور کی گئیں اور جرمانہ ختم جبکہ دس ہزار جرمانہ کی اپیل میرٹ پر نہ ہونے پر خارج کی گئی سب انسپکٹر محمد لطیف خانیوال کی دو اپیلیں ضبطگی سروس چھ ماہ اور ترقی روکے جانے چھ ماہ میرٹ پر ہونے پر منظور کی گئی اور سزا ختم کی گئی سب انسپکٹر اسد رضا وہاڑی کی اپیل سروس ضبطگی ایک سال منظور کر کے آئندہ محتاط رہنے کی ہدایت کی اسسٹنٹ سب انسپکٹر محمد جاوید خانیوال کی اپیل سروس ضبطگی چھ ماہ کو جر مانہ دو ہزار میں تبدیل کر دیااے ایس آئی منیر احمد لودہراں کی روکے جانے ترقی ایک سال کو سزا سنشور میں تبدیل کر دیااے ایس آئی منور ستار خانیوال کی اپیل سروس ضبطگی چھ ماہ کو منظور کرتے ہوئے سزا ختم جبکہ سروس ضبطگی دو سال اور مسعود صادق خانیوال کی سروس ضبطگی ایک سال کو سزائے سنشور میں تبدیل کر دیا اے ایس آئی ظفر اقبال لودہراں کی دو اپیلیں جرمانہ پانچ ہزار لیاقت علی کی اپیل جرمانہ تین ہزار میرٹ پر نہ ہونے پر خارج کی گئی اے ایس آئی صفدر منصور لودہراں اور ظفر اقبال کی جرمانے کی اپیلوں کو منظور کر لیا،اسسٹنٹ سب انسپکٹر لیاقت علی لودہراں کی ایک اپیل جرمانہ تین ہزار کو منظورجبکہ دو اپیلیں جرمانہ دوہزار/دوہزارمیرٹ پر نہ ہونے پر خارج، اسسٹنٹ سب انسپکٹر محمدشعیب سعید لودہراں کی دو اپیلیں جرمانہ پانچ ہزار اور تین ہزار منظور، ٹی ایس ائی محمد علی خان کی اپیل برخلاف برخاستگی کو تنزلی تنخواہ میں تبدیل کر کے عہدے پر بحال کر دیا ٹی اے ایس آئی امتیاز عاشق وہاڑی کی اپیل سروس ضبطگی ایک سال کو منطور کر لیا جبکہ ہیڈکانسٹیبل عبدالغفاروہاڑی کی اپیل سروس ضبطگی 01سال کو جرمانہ دوہزا رمیں تبدیل،ہیڈکانسٹیبل عباس علی وہاڑیاپیل سروس ضبطگی 01سال کو جرمانہ تین ہزا رمیں تبدیل جبکہ ہیڈکانسٹیبل محمد جہانگیرخانیوال کی اپیل سروس ضبطگی چھ ماہ کو جرمانہ دوہزا رمیں تبدیل اورکانسٹیبل محمد لطیف وہاڑی کی سروس ضبطگی 01سال میرٹ پر ہونے پر منظور اور سزاختم اور آئندہ محتاط رہنے کی ہدایت کی،کانسٹیبل محمد حمزہ خانیوال کی اپیل برخلاف برخاستگی میرٹ پر نہ ہونے پر خارج،سابقہ کانسٹیبل اسد بلال کی اپیل برخاستگی کو تنزلی تنخواہ دو سال میں تبدیل کر دیا ملازمت پر بحال کر دیا کانسٹیبل عمیر جمیل لودہراں کی اپیل سروس ضبطگی دوسال کو سزائے سنشور میں تبدیل کر دیا،سابقہ کانسٹیبل اکبر علی عادل لودہراں کی اپیل برخاستگی کو 01سال میں تبدیل کرتے ہوئے ملازمت پر بحال کردیا۔

جاوید اکبر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -