طالبعلم سمیت 3قتل‘ حادثہ میں جاں بحق خاتون امانتاً سپرد خاک 

طالبعلم سمیت 3قتل‘ حادثہ میں جاں بحق خاتون امانتاً سپرد خاک 

  

ڈیرہ غازیخان: چشتیاں، ترنڈہ محمد پناہ (بیورو رپورٹ، نمائندہ پاکستان، نمائندہ خصوصی) طالبعلم اندھی گولی کا نشانہ بن گیا، باپ بیٹا قتل کر دئیے گئے۔ حادثے میں جاں  بحق ہونے والے خاتون کے ورثا کا پتہ نہ چل سکا۔ ڈیرہ غازیخان سے بیورو رپورٹ کے مطابق رائبل ایرز مری پلاسین کے رہائشی قیمت خان زمری پٹھان کا اپنے گیارہ سالہ بیٹا عصمت(بقیہ نمبر32صفحہ6پر)

 اللہ کو کوئٹہ کے ایک سکول میں زیر تعلیم تھا عصمت اللہ سکول سے واپس آنے کے بعد اپنے ہم عمر کزن کے ہمراہ گھر کی چھت پر کھیل رہا تھا کہ اچانک نامعلوم سمت سے آنے والی اندھی گولی اسے سر میں لگی۔ زخمی کو فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا مگر وہ جانبر نہ ہوسکا۔  چشتیاں سے نمائندہ پاکستان کے طابق چک 26 گجیانی کے قریب 3 مسلح موٹر سائیکل  سواروں نے  فائرنگ کر کے باپ، بیٹے کو موت کے گھاٹ اُتار دیا بتایا جاتا ہے کہ محمد یونس ولد عیسی قوم اپنے بیٹے محمد آصف بسواری موٹر سائیکل عدالت میں پیشی کے سلسلہ میں چشتیاں کی طرف جا رہے تھے۔ جب وہ 26 گجیانی پہنچے تو اُن پر فائرنگ کر دی جس کے نتیجہ میں محمد یونس موقع پر جان بحق  جبکہ اس کا بیٹا محمد آصف شدید زخمی ہوگیا جو کہ ہسپتال جاتے ہوئے راستے میں دم توڑ گیا۔  مقتولین کا عبدالرزاق جٹ سکنہ چک نمبر33 فتح کے ساتھ احاطے کا تنازعہ چل رہا تھا۔ترنڈہ محمد پناہ سے نمائندہ خ صوصی کے مطابق ایک روز قبل   تھانہ چنی گوٹھ کی حدود میں مہند واہ کے قریب ٹریلر تصادم میں کار میں سوار خاتون سمیت ملتان کا رہائشی اشفاق ولد اسلم موقع پر جانبحق ہوگئے تھے یاد رہے کہ کار میں خاتون اور اشفاق ہی سوار تھے اشفاق کے ورثاء اپنے بیٹے کی ڈیڈ باڈی لے گئے اور اس خاتون کی شناخت سے انکار کیا جس پر پولیس تھانہ چنی گوٹھ تحصیل احمد پور شرقیہ نے حادثہ میں جانبحق نامعلوم خاتون کو لاورث قرار دیکر نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد مقامی قبرستان میں امانتاً سپردخاک کر دیا۔

اندھی گولی 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -