صوابی قتل کیس،2 ملزم بھائیوں کی قید وجرمانے کی سزا کالعدم

  صوابی قتل کیس،2 ملزم بھائیوں کی قید وجرمانے کی سزا کالعدم

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کی جسٹس مس مسرت ہلالی اور جسٹس سیدعتیق شاہ پرمشتمل دورکنی بنچ نے زیدہ صوابی کے مشہورزمانہ قتل کیس میں ملوث دوملزم بھائیوں کی اپیل منظورکرکے 50سال قید بامشقت اور4لاکھ روپے جرمانہ کی سزاکالعدم قرار دے دی ملزموں کی جانب سے استغفراللہ ٗ سید مبشرشاہ ٗ یاسین اللہ اورنصرمن اللہ ایڈوکیٹس نے اپیلوں کی پیروی کی استغاثہ کے مطابق ملزمان محمدطارق اورالطاف حسین ساکنان صوابی پرالزام ہے کہ انہوں نے تھانہ زیدہ صوابی کی حدود میں فائرنگ کرکے گوہررحمان کوقتل کردیاتھا فریقین میں سابق قتل مقاتلے کی دشمنی بتائی جاتی ہے ماتحت عدالت نے دونوں بھائیوں کو فی کس عمرقید اور2لاکھ روپے جرمانہ کی سزاسنائی جس کے خلاف ملزموں نے اپیل دائرکی اورعدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے دوطرفہ دلائل مکمل ہونے پرملزموں کی اپیل منظورکرلی 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -