کراچی:بس ریپڈ ٹرانزٹ ریڈ لائن کی تعمیر کے کام کا آغاز کردیا گیا

کراچی:بس ریپڈ ٹرانزٹ ریڈ لائن کی تعمیر کے کام کا آغاز کردیا گیا

  

      کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی میں بس ریپڈ ٹرانزٹ ریڈ لائن کی تعمیر کے کام کا آغازکردیا گیاہے، پہلے مرحلے میں ملیر ہالٹ کے ٹینک چوک سے صفورا چورنگی تک تعمیراتی کام شروع کیا گیا ہے۔رپورٹ کے مطابق ریڈ لائن بی آر ٹی منصوبے کا تعمیراتی زون ٹینک چوک سے چیک پوسٹ نمبر 6، ملیر ہالٹ تک ہے۔ سندھ ٹریفک پولیس نے ریڈ لائن بی آر ٹی کے تعمیراتی کام کی وجہ سے ٹریفک کے ڈائیورژن پلان کا اعلان کردیا۔ایڈوائزری کے مطابق ٹریفک پولیس کی جانب سے اس روٹ کیلئے 4 ڈائیورشن دیئے گئے ہیں، مسافروں کو یونیورسٹی روڈ کیلئے چیک پوسٹ نمبر 5 سے پہلوان گوٹھ روڈ جانا ہوگا، وہ صفورا چورنگی سے ریس کورس روڈ سے منسلک ہوکر شاہراہ فیصل اور دیگر ملحقہ علاقوں تک جاسکتے ہیں۔ٹریفک پولیس کے مطابق مسافر جناح ایونیو سے کینٹ روڈ لے کر گلستان جوہر روڈ پر پہنچ سکتے ہیں اور پھر مین یونیورسٹی روڈ سے جڑ سکتے ہیں، وہ شاہراہ فیصل اور یونیورسٹی روڈ کیلئے متبادل سڑک کے طور پر چیک پوسٹ 5 سے چیک پوسٹ 6 کے راستے کا استعمال کرسکتے ہیں۔این ای ڈی اربن اینڈ انفراسٹرکچر انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ کے چیئرمین ڈاکٹر عدنان قادر نے ریڈ لائن بی آر ٹی روٹ کی وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ یہ ٹینک چورنگی ملیر ہالٹ سے شروع ہوکر صفورا چورنگی تک جاتی ہے، جہاں سے نیو ایم اے جناح روڈ کیلئے کراچی یونیورسٹی روڈ سے ہوتی ہوئی نمائش چورنگی پر ختم ہوتی ہے۔ڈاکٹر عدنان قادر کے مطابق نمائش چورنگی پر 3 منزلہ عمارت تعمیر کی جانی ہے، جہاں گرین لائن، ریڈ لائن اور یلو لائن ریپڈ ٹرانزٹ بسیں کھڑی کی جائیں گی، گرین لائن، ریڈ لائن اور یلو لائن بس سروسز کو نمائش چورنگی پر ختم کیا جانا ہے۔کراچی کے مختلف علاقوں کے مسافروں کو نمائشی سے میری ویدر تاور اور دوسرے مقامات تک لے جانے کیلئے شٹل بس سروس شروع کی جائے گی۔ٹریفک پولیس نے مسافروں سے درخواست کی ہے کہ وہ تاخیر سے بچنے کیلئے ٹینک چورنگی، ملیر ہالٹ سے صفورا چوک کے درمیان تعمیراتی کام کی وجہ سے متبادل راستہ اختیار کریں۔

مزید :

صفحہ اول -