دوسرا ٹیسٹ میچ بھی بے نتیجہ ختم ۔۔۔۔۔ پاکستان کیلئے " ڈرا میں جیت کا مزہ"

دوسرا ٹیسٹ میچ بھی بے نتیجہ ختم ۔۔۔۔۔ پاکستان کیلئے " ڈرا میں جیت کا مزہ"
 دوسرا ٹیسٹ میچ بھی بے نتیجہ ختم ۔۔۔۔۔ پاکستان کیلئے

  

کراچی ( ڈیلی پاکستان آن لائن) آسٹریلیا اور پاکستان کے درمیان کھیلے جانے والا دوسرامیچ پل پل رخ بدل کر ڈرا ہو گیا ۔ دوسری اننگز میں کپتان بابر اعظم ، عبد اللہ شفیق اور محمد رضوان کی عمدہ بیٹنگ کے باعث پاکستان یقینی شکست سے بچ پایا ۔

تفصیل کے مطابق کراچی ٹیسٹ کے پہلے روز آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا اور پہلی اننگز 9 کھلاڑیوں کے نقصان پر 556 رنز بنا کر تیسرے روز کے پہلے سیشن میں اننگز ڈکلیئر کی۔ اوپنر ڈیوڈ وارنر نے 36 اور عثمان خواجہ نے 160 رنز بنائے۔ ٹاپ آرڈر مارنس لبوشین بغیر کوئی رن بنائے رن آوٹ ہوئے۔ سٹیون سمتھ 72، ناتھن لیون 38، ٹریویز ہیڈ ، 23، کیمرون گرین 28، الیکس کیری 93،مچل سٹارک 28 رنز بنا کر آو¿ٹ ہوئے۔پاکستان کی جانب سے فہیم اشرف اور ساجد خان نے دو ،دو جبکہ شاہین آفریدی ،حسن علی ، نعمان علی اور بابر اعظم نے ایک ، ایک وکٹ حاصل کی ۔

 آسٹریلیا کے 556 رنز کے جواب میں قومی ٹیم پہلی اننگز میںصرف 148 رنز بنا کر آل آو¿ٹ ہو گئی ، کپتان بابر اعظم 36 رنز بنا کر نمایاں رہے ، اوپنر عبداللہ شفیق 13، امام الحق 20، اظہر علی 14، فواد عالم بغیر کوئی رن بنائے آو¿ٹ ہو گئے۔محمد رضوان 6، فہیم اشرف 4، ساجد خان 5 جبکہ حسن علی بغیر کوئی رن بنائے آوٹ ہوئے۔شاہین شاہ آفریدی نے 19 رنز بنائے۔آسٹریلیا کی جانب سے مچل سٹارک 3اورمچل سوئپسن2جبکہ پیٹ کمنز ، نتھان لیون اور کیمرون گرین ایک ،ایک وکٹ لینے میں کامیاب رہے۔

آسٹریلیا نے پہلی اننگز میں408رنز کی برتری کے باوجود فالو آن نہیں کیا اور دوسری اننگز صرف 97سکور بنا کر ڈکلیئر کردی ۔ مہمان ٹیم کی جانب سے میزبانوں کو 506 رنز کا ہدف دیا گیا ہے۔دوسری اننگز میں آسٹریلوی اوپنر عثمان خواجہ 44 رنز کے ساتھ ناقابل شکست رہے ، ساتھی اوپنر ڈیوڈ وارنر 7 رنز بنا کر حسن علی کی گیند پر فواد عالم کے ہاتھوں کیچ آوٹ ہو گئے۔ ٹاپ آرڈر مارنس لبو شین نے 44رنز بنائے ، وہ شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر کلین بولڈ ہوئے۔ ان کے آوٹ ہوتے ہی آسٹریلیا نے اننگز ڈکلیئر کر دی۔

پاکستان نے دوسری اننگز چو تھے روز کے پہلے سیشن میں شروع کی تو ابتدائی دو وکٹیں جلد ہی گر گئیں ، اوپنر امام الحق صرف ایک رن بنا کر ایل بی ڈبلیوہو گئے ، ٹاپ آرڈر اظہر علی بھی 6 رنز بنا کر چلتے بنے جس کے بعد کپتان بابر اعظم اور اوپنر عبداللہ شفیق نے ذمے دارانہ بیٹنگ کا ثبوت دیا اور چوتھے روز مزید کوئی وکٹ نہیں گری۔ پانچویں روز بھی دونوں کھلاڑیوں نے ذمہ داری کا مظاہرہ کیا اور مجموعی سکور کو 249 تک پہنچایا جہاں عبداللہ شفیق 96 رنز بنا کر پیٹ کمنز کی گیند پر سمتھ کے ہاتھوں کیچ آوٹ ہو گئے۔ فواد عالم امیدوں پر پورا نہ اترے اور صرف 9 رنز بنا کر کیچ آوٹ ہو گئے۔ اس کے بعد محمد رضوان نے کپتان بابر اعظم کا بھرپور ساتھ دیا ، دونوں کھلاڑیوں نے115 رنز کی پارٹنر شپ کی جہاں کپتان بابر اعظم 196 رنز بنا کر کیچ آوٹ ہو گئے ، اگلی ہی گیند پر فہیم اشرف بھی کیچ آوٹ ہو گئے۔اس کے بعد ساجد خان 9سکور بنا کر نتھان لیون کی گیند پر آوٹ ہوئے ۔ محمد رضوان 104سکور بنا کر ناٹ آوٹ رہے ۔ اس طرح قومی ٹیم نے پانچویں روز کے اختتام پر 7وکٹوں کے نقصان پر 443رنز بنائے اور میچ ڈرا ہو گیا ۔ 

مزید :

اہم خبریں -کھیل -