اسلام آباد چیمبرکے وفد کا چین کا کامیاب تجارتی دورہ

اسلام آباد چیمبرکے وفد کا چین کا کامیاب تجارتی دورہ

اسلام آباد (کامرس ڈیسک ) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ایک وفد نے چیمبر کے نائب صدر مرزا محمد علی کی قیادت میں چین کا کامیاب دورہ کیا۔ وفد میں انفارمیشن ٹیکنالوجی، الیکٹرانکس، ہاسپیٹیلٹی، سروسز اور برآمدات کے شعبوں کے نمائندگان شامل تھے۔ وفد نے چین میں منعقد ہونے والے کنٹن فیئر میں شرکت کی، مختلف شہروں میں چین کی تاجر برادری کے ساتھ اجلاس کئے اور صنعتی اداروں کا دورہ کیا۔ وفد نے چین کے ژانگ شن شہر میں ایک بزنس فورم میں بھی شرکت کی جس کا اہتمام چین میں پاکستانی کونسلیٹ جنرل اور ژانگ شن بیورو آف فارن ٹریڈ اینڈ اکنامک کوآپریشن (بوفٹیک) نے کیا ۔ فورم میں چین کی 21کمپنیوں نے بھی شرکت کی اور پاکستانی تاجر برادری کے ساتھ مشترکہ تعاون کے امکانات پر تبادلہ خیال کیا۔

 فورم سے خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس کے نائب صدر مرزا محمد علی نے چین کی تاجر برادری کو پاکستان کی معیشت کے مختلف شعبوں میں پائے جانے والے سرمایہ کاری کے مواقعوں سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے کی وسیع گنجائش موجود ہے ۔ انہوں نے کہا یہ بڑی حوصلہ افزاءبات ہے کہ چین کی کئی کمپنیاں پاکستان میں سرمایہ کاری کر رہی ہیں اور پاکستان کی معیشت کی ترقی میں فعال کردار ادا کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا چین کا دورہ کرنے کا مقصد دونوں ممالک کے درمیان تعاون کی نئی راہیں تلاش کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کی تاجر برادری پاک چین آزاد تجارت کے معاہدے کو استعمال میں لا کر باہمی تجارت بڑھانے کیلئے کوششیں تیز کرے۔مسٹر رچرڈ لیو، ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل ، بوفٹیک نے اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس کے وفد کو چین میں خوش آمدید کہا۔ انہوں نے کہا کہ بوفٹیک کے ایک وفد نے اس سال فروری میں پاکستان کا کامیاب دورہ کیا تھا اور اس کے جواب میں آئی سی سی آئی کے وفد کے چین کے دورے سے دونوں ممالک کے درمیان تجارتی تعلقات کو مزید فروغ ملے گا۔پاکستان کونسلیٹ جنرل نے اسلام آباد چیمبر آف کامرس کے وفد کے اعزاز میں ایک عشائیہ دیا جس میں چین کی 25مقامی کمپنیوں کے نمائندگان نے شرکت کی۔ اس موقع پر دونوں ممالک کی تاجر برادری نے باہمی دلچسپی کے شعبوں میں تعاون بڑھانے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔ دونوں ممالک کی تاجر برادری نے اس بات پر زور دیا کہ پاکستان اور چین تجارتی وفود کا باکثرت تبادلہ بڑھانے پر توجہ دیں تا کہ نجی شعبوں کو قریب لا کر ایک دوسرے کے ملک میں جائنٹ وینچرز شروع کرنے اور سرمایہ کاری کو فروغ دینے کی راہ ہموار ہو۔

مزید : کامرس