ٹاﺅن شپ انڈسٹریل اسٹیٹ میں بنیادی انفراسٹرکچر کی تعمیر ملکی ترقی کیلئے ناگزیر ہے: ظہیر بھٹہ

ٹاﺅن شپ انڈسٹریل اسٹیٹ میں بنیادی انفراسٹرکچر کی تعمیر ملکی ترقی کیلئے ...

لاہور(کامرس رپورٹر) چیئرمین لاہور ٹاﺅن شپ انڈسٹریز ایسوسی ایشن ظہیر بھٹہ نے کہا ہے کہ انڈسٹریل اسٹیٹ میں بنیادی انفراسٹرکچر کی تعمیر ملکی ترقی کیلئے ناگزیر ہے،کٹار بند انڈسٹریل اسٹیٹ میں سڑکوں کی تعمیر اور بنیادی سہولیات کی فراہمی کا انفراسٹرکچر ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیا جائے کیونکہ حکومت کے مختلف محکموں کا آپس میں کوآرڈینیشن نہ ہونے کی وجہ سے کٹار بند انڈسٹریل اسٹیٹ میں صنعتکاروں کو سخت پریشانی کا سامنا ہے۔

 سڑکیں کھود کر تباہ کردی گئی ہیں ۔آمدورفت کے راستوں میں بڑے بڑے گڑھے موجود ہیں جس کی وجہ سے ذرائع آمدورفت بند ہوکر رہ گئی ہے۔کٹار بند انڈسٹریل اسٹیٹ میں 150 مختلف قسم کے انڈسٹریل یونٹ کام کر رہے ہیں اور حکومت کو لاکھوں روپے مختلف مدوں میں ادا کرکے حکومتی ریونیو میں اضافہ کر رہے ہیں لیکن انہیں بنیادی سہولیات فراہم نہیں کی جارہی ہیںسڑکیں تباہ ہوگئی ہیں گردو غبار سے مزدور اور رہائشی سانس و دیگر بیماریوں میں مبتلا ہورہے ہیں جبکہ صنعتکار پریشانی کا شکار ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کٹار بند انڈسٹریل اسٹیٹ کے صنعتکاروں ایک وفد سے جنہوں نے ٹاﺅن شپ انڈسٹریل اسٹیٹ میں ان سے ملاقات کی سے گفتگوکرتے ہوئے کیا ملاقات میں میاں خرم الیاس سینئر وائس چیئرمین ،عامر عطاءباری وائس چیئرمین و دیگر عہدیداران بھی موجود تھے ۔ظہیر بھٹہ نے کہا کہ انڈسٹریز کے مسائل حل کیئے بغیر ملکی معیشت کی ترقی ناممکن ہے ۔کٹار بند انڈسٹریل اسٹیٹ میں سڑکوں میںکھدائی کے بعدگہرے گڑھے بننے سے صنتعکار اپنی انڈسٹریز تک خام مال نہیں پہنچاسکتے اور نہ ہی مزدور وقت پر فیکٹری پہنچتے ہیں جس کی وجہ سے صنعتوں کی پیداواری صلاحیت متاثر ہورہی ہیںنیز حادثات میں مزدور زخمی اورانڈسٹریز میں استعمال ہونے والا خام مال تباہ ہورہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ تمام محکمے اپنی ذمہ داریاں دیانتداری اور ذمہ داری سے ادا کریں اور سڑکوں اور سیوریج کے سسٹم کو فوری مکمل کریں تاکہ صنعتکار یکسوئی سے کام کرکے حکومتی ریونیو اور ٹیکسوں میں اضافہ کرسکیں ۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ کٹار بند انڈسٹریل اسٹیٹ میں سڑکوں کو فی الفور تعمیر کیا جائے اور اس انڈسٹریل اسٹیٹ کا انفراسٹرکچر بحال کیا جائے اور صنعتکاروں کومالی و دیگر نقصانات سے بچایا جائے۔انہوں نے کہا کہ اگر کٹار بند انڈسٹریل اسٹیٹ میں بنیادی انفراسٹرکچر فی الفور مکمل نہ کیا گیا تو احتجاج بڑھتا جائے گا اورعلاقہ میں امن و امان کی صورتحال مزید خراب ہوگی۔

مزید : کامرس