پی پی ،جماعت اسلامی ،اے این پی،جے یو آئی (ف) کا اپوزیشن جماعتوں کے گرینڈ الائنس میں شامل نہ ہونیکا فیصلہ

پی پی ،جماعت اسلامی ،اے این پی،جے یو آئی (ف) کا اپوزیشن جماعتوں کے گرینڈ ...
پی پی ،جماعت اسلامی ،اے این پی،جے یو آئی (ف) کا اپوزیشن جماعتوں کے گرینڈ الائنس میں شامل نہ ہونیکا فیصلہ

  

لاہور(حنیف خان)پاکستان پیپلز پارٹی ،جماعت اسلامی ،عوامی نیشنل پارٹی اور جمعیت علماء اسلام (ف) نے تحریک انصاف کی طرف سے اپوزیشن جماعتوں پر مشتمل گرینڈ آلائنس میں شامل نہ ہونے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ متحدہ قومی موومنٹ اس تحریک کا حصہ بننے یا نہ بننے کے متعلق ابھی تک کوئی بھی فیصلہ نہیں کرپائی ہے جس کی وجہ سے اپوزیشن کا مجوزہ گرینڈ آلائنس وجود میں آنے کے امکان معدوم ہو گئے ہیں لیکن اس ساری سیاسی صورت حال میں ایم کیو ایم جو بھی فیصلہ کرے گی وہ اہم ہو گا کیونکہ متحدہ کی قومی اسمبلی اور سینٹ میں اچھی پوزیشن ہے وہ جس طرف بھی کھڑے ہوں گے اس کو تقویت ملے گی ۔ذرائع نے بتایا کہ تحریک انصاف نے الیکشن 2013میں مبینہ دھاندلی کے خلاف اورانتخابی نظام میں اصلاحات کے لئے گرینڈ آلائنس بنانے کے لئے اپوزیشن جماعتوں سے رابطے شروع کردیئے ہیں اس سلسلے میں تحریک انصاف ، عوامی مسلم لیگ اورمسلم لیگ ق وفاقی حکومت کے خلاف تحریک چلانے کے لئے ایک پیج پر ہیں جبکہ ڈاکٹرطاہر القادری کی جماعت عوامی تحریک کو بھی مستقبل میں اس تحریک کا حصہ بنایا جائے گا ۔لیکن تحریک انصاف کی وفاقی حکومت کے خلاف چلائی جانے والی تحریک اس وقت تک توانا ہوتی نظر نہیں آئے گی جب تک اس تحریک کا حصہ پیپلز پارٹی اور جماعت اسلامی نہیں بنے گی ۔ذرائع نے بتایا کہ پیپلزپارٹی ،جماعت اسلامی ،عوامی نیشنل پارٹی اور جمعیت علماء اسلام (ف) نے کسی بھی اس تحریک میں شامل نہ ہونے کا فیصلہ کیا ہے جس سے ملک میں نئی سیاسی ہلچل پیدا ہو یا جمہوریت کو خطر ہ ہو۔جماعت اسلامی کی طرف سے ذرائع نے بتایا کہ جماعت اسلامی نے فی الحال اس تحریک کا حصہ نہیں بنے گی جماعت اسلامی پاکستان کو تحریک انصاف کے موقف سے اختلاف نہیں لیکن تحریک چلانے کے اندازاور ان دوسری سیاسی جماعتوں کی بعض سیاسی شخصیات کے کردار سے اختلاف ہے جنہوں نے جنرل (ر)پرویز مشرف کا ساتھ دیا۔دریں اثناء پیپلزپارٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ مسلم لیگ ن کی مکمل حمایت کرے گی اور حکومت کو گرنے نہیں دے گی جبکہ پارٹی رہنماؤں کو بھی سوچ سمجھ کر بیان دینے کی ہدایت کی ہے ۔ عوامی نیشنل پارٹی اور جمعیت علماء اسلام (ف) بھی تحریک انصاف کی تحریک کی مخالفت کرے گی ذرائع نے بتایا کہ وفاقی حکومت نے بھی بیک ڈو ر سیاسی جماعتوں سے رابطے کئے ہیں اوروفاقی وزراء نے سیاسی جماعتوں کو حکومتی اقدامات کے حوالے سے اعتماد میں لیا ہے ۔جبکہ پیپلز پارٹی بھی اس تحریک کو ناکام بنانے کے لئے پہلے سے ہی میدان میں کود پڑی ہے جس کے پیش نظر متحدہ قومی موومنٹ کو سندھ حکومت میں شامل کیا گیا ہے اور انہیں مذید اہم عہدے بھی دیئے جانے کا امکان ہے تاکہ متحدہ قومی موومنٹ کسی تحریک کا حصہ نہ بنے مگرمتحدہ قومی موومنٹ ابھی تک تحریک انصاف کی طرف سے مستقبل میں بنائے جانے والے گرینڈ آلائنس میں شامل ہونے یا نہ ہونے کا حتمی فیصلہ نہیں کرسکی ۔

مزید : قومی /اہم خبریں