مذاکرات کے لئے جگہ کا تعین نہیں ہوسکا :پروفیسرابراہیم

مذاکرات کے لئے جگہ کا تعین نہیں ہوسکا :پروفیسرابراہیم
مذاکرات کے لئے جگہ کا تعین نہیں ہوسکا :پروفیسرابراہیم

  

پشاور(نیوز ڈیسک)جماعت اسلامی خیبر پختونخوا کے امیر اور طالبان کمیٹی کے رکن پروفیسر محمد ابراہیم خان بتایا ہے کہ مذاکرات کیلئے جگہ کے تعین کی غرض سے طالبان کمیٹی کے سارے رابطے بے سود ثابت ہو ئے ہیں ۔ ایک بیان میں انہوں نے بتایا کہ طالبان کمیٹی کے رابطہ کار مولانا یوسف شاہ نے طالبان کو مذاکرات پر آمادہ کرلیا تھا لیکن شمالی وزیرستان میں عملی طور پر کرفیو نافذ ہے جس کی وجہ سے مذاکرات عملاً معطل ہیں ۔ پروفیسر محمد ابراہیم خان کے مطابق 23اپریل کو وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان کی موجودگی میں سرکاری اور طالبان کمیٹیوں کے آخری اجلاس میں طالبان کمیٹی کو طالبان کی شوریٰ سے رابطہ کرکے دونوں کمیٹیوں کی طالبان شوریٰ سے کے ساتھ اجلاس کے لئے وقت اور جگہ کے تعین کی ذمہ داری سونپی گئی تھی ۔ پروفیسر محمدا براہیم خان نے گورنر خیبر پختونخوا ہ سے مطالبہ کیا کہ شمالی وزیرستان میں کرفیو مکمل طور پر ختم یا کم ازکم لمبے وقفے کیلئے کرفیو میں نرمی کی جائے تاکہ عوام اپنے لئے ضروریات زندگی پوری کر سکیں۔

مزید : قومی