حکومت کا قبائلی اور بندوبستی علاقوں کی سرحد پر پولیو ویکسین کیلئے فوج تعینات کرنے کا فیصلہ

حکومت کا قبائلی اور بندوبستی علاقوں کی سرحد پر پولیو ویکسین کیلئے فوج تعینات ...
حکومت کا قبائلی اور بندوبستی علاقوں کی سرحد پر پولیو ویکسین کیلئے فوج تعینات کرنے کا فیصلہ

  

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وزیر اعظم نواز شریف سے پولیو مانیٹرنگ سیل کی فوکل پرسن عائشہ رضا کی ملاقات ٗ حکومت نے قبائلی اور بندوبستی علاقوں کی سرحد پر پولیو ویکسین کیلئے فوج تعینات کرنے کا فیصلہ کرلیا ۔ وزیراعظم ہاؤس سے جاری اعلامیے کے مطابق اس اقدام کا مقصد فاٹا سے بندوبستی علاقوں کو آنے والے افراد کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانا ہے،انسداد پولیو قطرے پینے والوں ہی کو بندوبستی علاقوں میں داخل ہونے کی اجازت ہوگی۔وزیراعظم نے فاٹا میں قطرے پلانے والے کارکنوں کی رسائی کی کوششیں تیز کرنے کی بھی ہدایت کی ہے ۔وزیراعظم نے کہا کہ موذی بیماری کے خاتمے کے لیے تمام وسائل بروئے کار لائیں گے ، پولیو کا معاملہ کابینہ اجلاس میں بھی زیر غور آئے گا جبکہ وزیراعظم نے ٹاسک فورس کا اجلاس فوری طورپر بلانے کا فیصلہ کیاہے ۔ فاٹا میں دو لاکھ ساٹھ ہزار بچے گذشتہ تین سال سے پولیو ویکسین سے محروم ہیں ۔ قبل ازیں وزیراعظم نواز شریف سے رکن قومی اسمبلی عائشہ رضا فاروق نے ملاقات کی جس میں انہوں نے وزیر اعظم کو عالمی ادارہ صحت کی جانب سے سفر کے لیے ویکسین لازمی قرار دینے ، وزارت قومی صحت اور مانیٹرنگ سیل کے اختیارات اور لندن میں پولیو خود مختار مانیٹرنگ بورڈ کے اجلاس سے متعلق بریفنگ بھی دی۔وزیر اعظم نے پولیو مانیٹرنگ سیل کی فوکل پرسن عائشہ رضا کو اس سلسلے میں گورنر خیبر پختونخوا سے ملاقات کرنے کی ہدایت بھی کی ہے ۔ عائشہ رضا فاروق نے وزیراعظم کو وفاقی اور صوبائی سطح پر کئے گئے اقدامات سے بھی آگاہ کیا ۔

مزید : قومی /اہم خبریں