الطاف حسین کو شناختی کارڈ جاری نہ کرنے کا معاملہ۔متحدہ نے وزیرداخلہ سے استعفاکا مطالبہ کردیا ،آج احتجاج کاا علان

الطاف حسین کو شناختی کارڈ جاری نہ کرنے کا معاملہ۔متحدہ نے وزیرداخلہ سے ...

                              کراچی +لندن ( مانیٹرنگ ڈیسک)متحدہ قومی موومنٹ نے اپنے قائد الطاف حسین کو قومی شناختی کارڈ جاری نہ کرنے پر شدید ردِ عمل کااظہار کیا ہے اور خبردار کیا ہے کہ اگر شناختی کارڈ بنانے میں تاخیر یا انکار کیا گیا تو ملک گیر احتجاج کیا جائے گا ۔ ایم کیو ایم نے وزیراعظم نواز شریف سے وزیرداخلہ چودھری نثار علی خان سے استعفیٰ لیکر ان کی پارٹی کی رکنیت ختم کرنے کا بھی مطالبہ کردیا ہے جبکہ ایم کیو ایم آج کراچی میں کارساز کے مقام پر نادرا کے دفتر کے سامنے احتجاج کرے گی جس سے رابطہ کمیٹی کے ارکان خطاب کریں گے ۔ایم کیو ایم کی کراچی اورلندن رابطہ کمیٹی کا مشرکہ اجلاس ہوا جس میں قائد تحریک کو قومی شاختی کارڈ جاری نہ کیے جانے کی شدید مذمت کی گئی اور کہا گیا کہ وزیرداخلہ نے الطاف حسین کے شناختی کارڈ کو ذاتی انا کا مسئلہ بنا لیا ہے جو طرح طرح کی رکاوٹیں کھڑی کررہے ہیں، کبھی کہتے ہیں کہ تصویر درست نہیں اور کبھی فنگر پرنٹ ٹھیک نہ ہونے کا بہانہ بناتے ہیں، اگر ان کا متعصبانہ رویہ نہ بدلہ تو ملک بھر کے عوام احتجاج کریں گے ۔ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین نے رابطہ کمیٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انہوںنے قومی شناختی کارڈ کے حصول کیلئے درخواستیں دیں لیکن وہ ردی کی ٹوکری میں ڈال دی گئیں، پاکستانی شہری کی حیثیت سے قومی شناختی کارڈ میرا حق ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ مجھ سے سیاسی انتقام لیا جارہا ہے جس سے میرے چاہنے والوں کی دل آزاری ہورہی ہے ۔ جس پر رابطہ کمیٹی نے انتباہ کیا کہ اگر شناختی کارڈ بنانے میں تاخیر یا انکار کیا گیا تو ملک بھر میں احتجاج کیا جائے گا۔

الطاف حسین

مزید : صفحہ اول