مویشیوں میں مختلف بیماریوں کی نشاندہی کے لیے سروے مکمل کرکے ایک جامع رپورٹ تیار

مویشیوں میں مختلف بیماریوں کی نشاندہی کے لیے سروے مکمل کرکے ایک جامع رپورٹ ...

لاہور(کامرس رپورٹر) محکمہ لائیوسٹاک نے پنجاب کے تمام اضلاع میں یونین کونسل کی سطح پر گاؤں میں پالے جانے والے مویشیوں میں مختلف قسم کی بیماریوں کی نشاندہی کے لیے سروے مکمل کرکے ایک جامع رپورٹ تیارکر لی ہے۔ تمام دیہات سے گائیں بھینسوں، بھیڑبکریوں اوردیہی مرغیوں میں اندرونی کرم، مخفی سوزش ہوانہ، خون میں پائے جانے والے پروٹوزوا (Anaplasma,Theileria,Babesia)اور بروسیلا کے لیے خون، گوبراوردودھ کے نمونہ جات حاصل کرکے لیبارٹری میں تشخیص کی گئی۔سیکرٹری لائیو سٹاک نسیم صادق سیکرٹری لائیوسٹاک نے کہاکہ 57.15فیصد، 54.43فیصد، 52.06فیصد اور53.93فیصد کرم بالترتیب گائے بھینسوں، بھیڑبکریوں اور دیہی مرغیوں میں پائے گئے ہیں۔ خون میں پروٹوزواکاتناسب 4.14فیصد،3.23فیصداور 4.84فیصد بالترتیب پایاگیاہے۔ مخفی سوزش ہوانہ 19.92فیصد اور بروسیلاانفیکشن5.16فیصد ریکارڈ کیاگیاہے ۔

جس سے مویشی پال حضرات اپنے جانوروں میں اندرونی کرم اورمخفی سوزش ہوانہ سے ماہانہ 12,701,062,791اور623,877,453روپے کابالترتیب نقصان ہورہاہے ۔ محکمہ لائیوسٹاک کے ویٹرنری اورپیراویٹرنری سٹاف نے بغیرکسی اضافی خرچے کے شب وروز محنت کرکے پایہ تکمیل تک پہنچایا ہے انہوں نے مزید کہاکہ محکمہ لائیوسٹاک ایک واحد محکمہ ہے جس کے بعد پنجاب بھرکے مویشیوں میں علاقائی طورپر پائی جانے والی بیماریوں کا کمپیوٹرائزڈ ریکارڈ موجود ہے نسیم صادق سیکرٹری لائیوسٹاک نے کہاکہ اب اس رپورٹ کی روشنی میں جانوروں میں علاقائی طورپر بیماریوں پر قابوپانے میں مدد مل سکے گی اورانہیں نتائج کی روشنی میں جامع منصوبہ بندی کی جارہی ہے تاکہ یہ علاقے میں پائی جانے والی بیماری کے مطابق ہی ادویات اورنمکیاتی آمیزے لیے جائیں جس سے اخراجات میں یقینی کمی اورجانوروں کی پیداوارمیں اضافہ ہوگا۔

مزید : کامرس


loading...