سرکاری گاڑی سے پٹرول چوری میں ملوث 2 ڈرائیور بحال

سرکاری گاڑی سے پٹرول چوری میں ملوث 2 ڈرائیور بحال

لا ہور (کرا ئم سیل )لاہور پولیس کے اعلیٰ افسران کا کمال ،سابق ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہو رکی سرکاری گاڑی سے لاکھوں روپے کا پٹرول چوری کرنے والے دو ڈرائیوروں کو بحال کر دیا ، مذکورہ اہلکاروں سے ایک پیسے کی بھی ریکو ری نہ کی گئی بلکہ دونوں کو بیگناہ قرار دے دیا گیا ۔ ذرائع کے مطابق کچھ عرصہ قبل سابق قائم مقام سی سی پی او لاہور و سابق ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور ذوالفقار حمید کی سرکاری گاڑیوں سے پٹرول چوری ہونے کی خفیہ انکوائری کروائی گئی ۔ سابق قائم مقام سی سی پی او و ڈی آئی جی انویسٹی گیشن ذوالفقار حمید نے انکوائری سابق ایس ایس پی انویسٹی گیشن لاہور عبدالرب کو کرنے کا حکم دیا جنہوں نے سابق ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور ذوالفقار حمید کے دو ڈرائیوروں عارف اور زبیر کو شک گزرنے پر انکوائری میں شامل تفتیش کیا اور دونوں ڈرائیوروں سے باقائدہ تفتیش کی تو دونوں ڈرائیوروں عارف اور زبیر نے اس بات کا اعتراف کیا کہ انہوں نے سابق ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور ذوالفقار حمید کی سرکاری گاڑیوں سے لاکھوں روپے کا سرکاری پٹرول چوری کرکے فروخت کر چکے ہیں اور وہ یہ کام گزشتہ چند سالوں سے کر رہے تھے جس پر سابق سی سی پی او لاہور و ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور ذوالفقار حمید نے اپنے دونوں ڈرائیوروں عارف اور زبیر کو معطل کرکے ان کے خلاف سخت محکمانہ کارروائی کا حکم دیا ۔ سابق ڈی آئی جی ذوالفقار حمید کے سیٹ چھوڑ کر بیرون ملک جانے کے کچھ عرصہ بعد لاہور پولیس کے اعلیٰ افسران نے کمال کام کرتے ہوئے دونوں مذکورہ ڈرائیوروں کو انکوائری میں بیگناہ قرار دیکر ان کے خلاف ہونے والی محکمانہ کارروائی کو ختم کر کے چند روز قبل دونوں ڈرائیوروں زبیر اور عارف کو دوبارہ بحال کر دیا ہے ۔

مزید : علاقائی


loading...