رمضان المبارک کو لوڈشیڈنگ فری مہینہ قرار دیا جائے ،عوامی تحریک

رمضان المبارک کو لوڈشیڈنگ فری مہینہ قرار دیا جائے ،عوامی تحریک

 لاہور (نمائندہ خصوصی) عوامی تحریک کا ہنگامی اجلاس مرکزی سیکرٹریٹ میں سیکرٹری جنرل خرم نوازگنڈاپور کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ اجلاس میں مطالبہ کیا گیا کہ رمضان المبارک کو لوڈشیڈنگ فری مہینہ قرار دیا جائے اور امن و امان کی ذمہ داری رینجرز کے سپرد کی جائے پولیس پر انحصار سنگین غلطی ہو گی ۔اجلاس میں پنجاب حکومت کے3.5 ارب روپے کے رمضان پیکیج اور سستے ماڈل بازاروں کے منصوبے کو روایتی ڈرامہ بازی اور بیکار مشق قرار دیتے ہوئے مطالبہ کیا کہ پنجاب حکومت کھلی مارکیٹ میں مصنوعی مہنگائی کو کنٹرول کرے اور عوام کو ریلیف دے ۔اجلاس میں مطالبہ کیا گیا وزیراعلیٰ پنجاب ہر سال رمضان پیکیج کی رقم کا ایک بڑا حصہ اپنی ذاتی تشہیر پر مبنی مہم کی نظر کر دیتے ہیں لہٰذا رواں سال وہ اس سے باز رہیں ۔اجلاس میں صدر پنجاب بشارت جسپال، جنرل سیکرٹری مشتاق نوناری ایڈووکیٹ، نائب صدر چودھری مظہر، خان عبدالقیوم خان، راجہ زاہد، راجہ ندیم نے شرکت کی۔انہوں نے کہا کہ اس وقت ذخیرہ اندوزوں نے منصوبہ بندی کے مطابق اشیائے خورونوش کی قلت پیدا کر دی ہے، چینی نایاب ہو چکی ہے،پھل اور سبزیاں 20فیصد تک مہنگے ہو گئے ہیں ۔ رمضان المبارک میں مہنگائی کنٹرول کرنے کے حوالے سے موجودہ حکمران پہلے مرحلے میں ناجائز منافع خورمافیا کے ہاتھوں ناک آؤٹ ہو چکے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ شوگر مل مالکان حکمران بتائیں جب چینی سرپلس ہے تو پھر وہ نایاب اور مہنگی کیوں ہو گئی؟صدر پنجاب بشارت جسپال نے وفاقی حکومت کی طرف سے یوٹیلیٹی سٹوروں کیلئے دی جانے والی سبسڈی کی رقم میں 25فیصد کٹوتی پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت یوٹیلیٹی سٹوروں کی طرف سے کم از کم 100فیصد اضافہ کرے اور یوٹیلیٹی سٹوروں پر اشیائے ضروریہ کی فراہمی یقینی بنائے۔ اجلاس میں پنجاب بالخصوص لاہور میں حرام گوشت کی فروخت کی رپورٹس پر بھی تشویش کا اظہار کیا گیا ۔ عوامی تحریک

مزید : صفحہ آخر


loading...