قانونی ضابطے کے بغیر عدالت کسی شہری کی آزادی سلب نہیں کر سکتی،ہائیکورٹ

قانونی ضابطے کے بغیر عدالت کسی شہری کی آزادی سلب نہیں کر سکتی،ہائیکورٹ

 لاہور (نامہ نگار خصوصی ) لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس فرخ عرفان خان کی سربراہی میں قائم5رکنی فل بنچ نے وزیر اعظم میاں نوا زشریف کو منی لانڈرنگ اورغیر قانونی اثاثے بنانے کے الزامات کے تحت تاحیات نااہل قرار دینے اوران کا نام ای سی ایل میں شامل کروانے کے لئے دائر درخواست کے قابل سماعت ہونے کے معاملہ پر دلائل طلب کرلئے ہیں ۔فاضل بنچ نے دوران سماعت قرار دیا کہ قانونی ضابطے کے بغیر عدالت کسی شہری کی آزادی سلب نہیں کر سکتی،پاکستان مرنے کے لئے نہیں بناوہ قیامت تک قائم رہے گا ،فاضل بنچ نے درخواست گزار کے وکیل سے کہا کہ وہ قانونی نکتے پر دلائل نہیں دے سکتے تو پھر عدالت سے رجوع کرنے کی بجائے پارلیمنٹ کے باہر مظاہرہ کریں ، ماتحت عدالتوں کے معاملات کے بھی آئینی عدالتوں نے ہی فیصلے کرنے ہیں تو پھر کیاماتحت عدالتیں بند کروادیں ؟گزشتہ25سال سے یہ درخواست ابتدائی مرحلے پر ہی ہے ، عدالت نے دیکھنا ہے کہ درخواست قابل سماعت ہے بھی یا نہیں۔پہلے درخواست کے قابل سماعت ہونے کا فیصلہ کریں گے پھر آگے چلیں گے۔ آزادی سلب

مزید : صفحہ آخر


loading...