دہشتگرد کاروائیوں میں دینی مدارس نہیں بھارتی ایجنسی ،را،کا ہاتھ ہے،سید افتخار حسن نقوی

دہشتگرد کاروائیوں میں دینی مدارس نہیں بھارتی ایجنسی ،را،کا ہاتھ ہے،سید ...

لاہور(جاوید اقبال) اسلامی نظریاتی کونسل کے سنئیر ممبر سید افتخار حسن نقوی نے کہا ہے کہ پاکستان میں ہونیو الی دہشت گردی میں بھارت کی ایجنسی ’’را‘‘ ملوث ہے دہشت گردی میں دینی مدارس کا ہاتھ نہیں ہے امریکہ بھارت اور اسرائیل پاکستان کے حالات اپنے پالتو دہشت گردوں سے خراب کروارہے ہیں چین کی پاکستان میں 45کھرب ڈالر کی سرمایہ کاری کے معاہدوں کو سبو تاز کرنے کے لئے پاکستان کے دشمن ان معاہدوں کو ’’ کالا باغ ڈیم‘‘ بنانے کے لئے متحرک ہو چکے ہیں جن کی سازشوں اور کاروائیوں کو حکومت افواج پاکستان اسمبلی اور تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کو مل جل کر ناکام بنانا ہو گا ۔کراچی صفورا چورنگی سانحہ میں اسماعیلی کیمونٹی کو نشانہ بنانا بھی انہی سازشوں کا حصہ ہے ۔وہ ’’ پاکستان‘‘ کو انٹرویو دے رہے تھے ۔سید افتخار حسین نقوی نے کہا کہ اسمبلی اسلامی نظراتی کونسل کی سفارشات پر من و عن عمل درآمد نہیں کرتی جس کے باعث ایک ہزار سے زائد پارلمنٹ نے ایسے قوانین پاس کئے جو اسلامی قوانین کے برعکس اور اسلامی نظریاتی کی سفارشات کے متصادم ہیں سعودی عرب اور یمن تنازعہ کے پیچھے امریکی لابی ہے جو ہمیں لراکر کمزور کرنا چاہتی ہیں پاکستانی حکومت نے سعودی عرب یمن کے تنازعہ میں پارٹی نہ بن کر ایک ذمہ دار ملک کا ثبوت فراہم کیا ہے دینی مدارس دہشت گرد پیدا نہیں کررہے ہیں بلکہ قومی وحدت کے لئے اہم رول ادا کرہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ملک کا نظام ایسا ہے کہ کمزور مولوی ہویا کوئی اور جلد پکڑ لیا جاتا ہے لیکن اربوں روپے ہڑپ کرنے والے بڑے بڑے مگر مچھوں وہ سیاست دان بھی ہیں اور بڑے بڑے افسر بھی ان پر کوئی ہاتھ نہیں ڈالتا ’’ مولوی‘‘ کمزور ہے اس لئے وہ کسی سے قربانی ایک کھال بھی بطور عطیہ لے تو اسے پکڑ لیا جاتا ہے ۔ایک سوال کے جواب میں سید افتخار حسین نقوی نے کہا کہ اسلامی نظریاتی کونسل ایک قومی وحدت پیدا کرنے کا ادارہ ہے جس میں اہم رول ادا کررہے ملک میں ایک دن عید اور ایک دن روزہ نہ ہونے میں کوئی قباحت نہیں ہے لیکن اس پر عمل نہ ہونے کی ذمہ دار حکومتیں اور روئت ہلال کمیٹی ہے ۔انہوں نے کہا کہ اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات پر مکمل عمل درآمد نہیں ہوتا پارلیمنٹ کئی سالوں سے ایک ہزار سے زائد ایسے قانون منظور کر چکی ہے جو اسلامی قوانین پر پورے نہیں اترتے ایک اور سوال کے جواب میں افتخار حسین نقوی نے کہا کہ چائنہ کی طرف سے پاکستان میں 45کھرب ڈالر کی سرمایہ کاری سے خلیجی ممالک سمیت امریکہ بھارت نا خوش ہیں اور اس معاہدوں کو ناکام بنانے کے لئے وہ متحرک ہو چکے ہیں اگر یہ معاہدے ناکام ہو ئے تو پاکستان کبھی اپنے پاؤں پر کھڑا نہیں ہو سکے گا چائنہ سے کئے گئے سرمایہ کاری کے معاہدوں کوکامیاب بنانے کے لئے وزیراعظم نواز شریف ’’دل‘‘ بڑا کریں سوچ وسیع کریں چھوٹے چھوٹے مسائل میں الجھنے کی بجائے ان کو بات چیت کے ذریعے حل کروائیں اورفوری طور پر دل بڑا کرکے کسی کو وزیر خارجہ بنا دیں ۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف کا دور حکومت پچھلے کئی دور حکومتوں سے بہتر ہے اور اس وقت آرمی چیف جنرل راحیل شریف سرحدوں کی حفاظت کے ساتھ ساتھ ملک کے اندرونی مسائل کو حل کرنے کے لئے دن رات ایک کئے ہوئے ہیں ۔ افتخار حسن نقوی

مزید : صفحہ آخر


loading...