نوازشریف نے جدید ترین سہولیات سے آراستہ گرین لائن ٹرین کا افتتاح کر دیا

نوازشریف نے جدید ترین سہولیات سے آراستہ گرین لائن ٹرین کا افتتاح کر دیا

 اسلام آباد(اے این این) وزیر اعظم نواز شریف نے اسلام آباد اور کراچی کے درمیان جدید ترین سہولیات سے آراستہ گرین لائن ٹرین کا افتتاح کر دیا،ٹرین کے ہر مسافر کے لئے 10لاکھ روپے کی انشورنس کا اعلان،نواز شریف نے کہا ہے کہ خواجہ سعد رفیق نے ریلوے کو ترقی کی راہ پر ڈال کر اپنا انتخاب درست ثابت کر دیا،جلد پی آئی اے بھی بحال ہو جائے گی۔جمعہ کو وزیراعظم محمد نواز شریف نے مارگلہ ریلوے اسٹیشن پر نئی گرین لائن تیز رفتار ٹرین کا افتتاح کیا جو اسلام آباد اور کراچی کے درمیان چلے گی۔ وزیراعظم نے اس موقع پر بوگیوں کے مختلف حصے دیکھے اور ٹرین میں مسافروں کیلئے کئے جانے والے جدید انتظامات کا جائزہ لیا۔وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق اور وزیراطلاعات ونشریات پرویز رشید بھی ان کے ہمراہ تھے۔نئی گرین لائن ٹرین اپنا سفر 23 گھنٹے 15 منٹ میں طے کرے گی۔ریڈیو پاکستان کے خصوصی نمائندے محمدسعید نے کہا ہے کہ یہ پہلی ائرکنڈیشن بزنس کلاس ٹرین سروس ہو گی جس میں مسافروں کو تمام راستے وائی فائی کی سہولت، تین وقت کا معیاری کھانا ، چائے ، منرل واٹر ، اخبارات اور معیاری بستر جیسی سہولتیں اور کئی مراعات فراہم کی جائیں گی۔اسلام آباد میں کراچی کا کرایہ ساڑھے پانچ ہزار اور لاہور سے کراچی کا کرایہ پانچ ہزار روپے ہو گا۔نئی گرین لائن ٹرین لاہور ، خانیوال ، بہاولپور ، روہڑی اور حیدرآباد میں پانچ تکنیکی سٹاپ کرے گی تاہم نئی ٹرین اپنے شیڈول کے مطابق اپنی منزل پر پہنچے گی۔ راولپنڈی ،لاہوراورکراچی ریلوے سٹیشنوں پر مسافروں کیلئے خصوصی لاونج تعمیر کئے جا رہے ہیں۔افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ گرین لائن ٹرین کو تجربانی منصوبہ سمجھا جائے،مستقبل میں ریلوے کراچی سے کاشغر کا سفر فراہم کریگی ،اخراجات میں کمی لاکر ادارے کو مستحکم کیا جارہا ہے۔انھوں نے کہا کہ ریلوئے کا ادارہ ایک عرصہ سے زوال کا شکارتھا جس کی بحالی بڑا چیلنج تھا ۔انہوں نے کہا کہ خواجہ سعد رفیق کا ادارے کے ملازمین سے خاص تعلق ہے،انہوں نے ریلوئے کی اربوں روپے مالیت کی زمین کو قبضہ گروپ سے چھڑائی جو بہت مشکل کام تھا۔خواجہ سعد رفیق نے ریلوے کو ترقی کی راہ پر ڈال کر اپنا انتخاب درست ثابت کر دیا ہے،جلد پی آئی کو بھی بحال کر دیاجائے گا۔عوام کو سفری سہولیات کی فراہمی ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ وزیراعظم نے ادارے کی کارکردگی پر مزید روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ہم سے پہلے مال برداری کے لیے صرف 8 انجن دستیاب تھے،اس وقت 80 انجن مال برداری کا کام کررہے ہیں لیکن ریلوئے کی بہتری میں ابھی گنجائش ہے۔انکا کہناتھاکہ پہلے دن سے مخصوص اداروں پر خاص توجہ دے رہے ہیں ،ریلوے کی طرح دوسرے اداروں میں بھی کارکردگی نظر آنی چاہیے،کیونکہ ان کی کارکردگی ہی حکومت کارکردگی ہوتی ہے۔ریلوے میں مزید بہتری کی گنجائش ہے اور مستقبل میں ریلوے کراچی سے کاشغر کا سفر بھی فراہم کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اداروں کی کارکردگی حکومت کی کارکردگی ہوتی ہے، پہلے دن سے مخصوص اداروں پر خاص توجہ دے رہے ہیں جب کہ گرین لائن منصوبے پر وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق اور ان کی ٹیم کو مبارکباد دیتے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ کسی سے زمین کا قبضہ چھڑانا بہت مشکل اکام ہے لیکن محکمہ ریلوے نے یہ کام کردکھایا ہے اس لئے اخراجات میں کمی لاکر ریلوے کو مزید مستحکم کیا جارہا ہے، ریلوے کا ادارہ ایک عرصے سے زوال کا شکار چلا آرہا تھا موجودہ حکومت کی کارکرگی کے پیش نظر 2013 سے 2014 تک 2 ارب سے زائد آمدنی ہوئی۔ نواز شریف نے کہا کہ حکومت مختلف اداروں کے مجموعے کا نام ہے اور ہم اداروں کو فعال کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ان اداروں میں ایک ادارہ ریلوے کا بھی ہے جوکہ مدت سے زوال پذیر تھا لیکن خواجہ سعد رفیق کی قیادت میں ریلوے نے صرف دو سال میں ادارے کو ترقی کی راہ پر ڈال دیا اور آمدن میں خاطر خواہ اضافہ ہوا۔ ابھی ہمیں ریلوے کی بحالی میں بہت کام کرنا ہے، گرین لائن ٹرین کا افتتاح قابل ستائش اقدام ہے ، سفری سہولیات کو عالمی معیار کے مطابق بنانے کے لیے گرین لائن ٹرین پہلا قدم ہے جس سے اسلام آباد سے شہر قائد اور لاہور کیلئے سفر کو آرام دہ اور برق رفتار بنایا جا رہا ہے۔ اب ٹرین میں سفر کرنیوالوں کی دس لاکھ روپے کی انشورنس بھی کی جائے گی ۔ مجھے پوری امید ہے کہ گوادر سے کاشغر لنک کے بعد آئندہ دور میں ترکی کے لیے بھی ریلوے لائن شروع کریں گے ۔ دریں اثنا وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے بتایا کہ وزارت ریلوے میرے لیے بہت بڑا چیلنج تھا جس کو احسن انداز سے نبھا رہا ہوں، میرے دور میں ادارے نے بے پناہ ترقی کی ۔ ہم نے ادارے سے رشوت اور سفارش کے کلچر کو جڑ سے اکھاڑ پھینکا ہے اب جیالا ہو یا متوالا سب کو میرٹ پر ملازمت ملتی ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...