شمالی وزیرستان اور کوئٹہ میں غیر ملکیوں سمیت 30دہشت گرد ہلاک کراچی میں ٹارگٹڈ آپریشن 107ملزم گرفتار

شمالی وزیرستان اور کوئٹہ میں غیر ملکیوں سمیت 30دہشت گرد ہلاک کراچی میں ٹارگٹڈ ...

 شوال ،باجوڑایجنسی،مستونگ(آن لائن،آ ئی این پی ، اے این این ). شمالی وزیرستان کے علا قے شوال میں سیکیورٹی فورسز کی فضائی کارروائی کے دوران 17 دہشت گرد ہلاک جب کہ ان کے 3 ٹھکانے اور دیگر املاک بھی تباہ کردی گئیں۔سیکورٹی زرائع کے مطابق دہشت گردوں کی موجودگی کی مصدقہ اطلاعات پر پاک فضائیہ کے جیٹ طیاروں نے شمالی وزیرستان کی تحصیل شوال میں فضائی کارروائی کی، جس کے نتیجے میں 17 ہشت گرد ہلاک جب کہ ان کے 3 ٹھکانے اور 5 گاڑیاں بھی تباہ کردی گئیں۔ ہلا ک ہو نے والو ں میں غیر ملکی دہشتگرد بھی شامل ہیں ، جبکہ کا روا ئی میں متعد د دہشتگرد زخمی بھی ہو ئے ہیں . سیکو ر ٹی ذرا ئع کا کہنا ہے کہ ما رے جا نے والو ں میں اہم کما نڈر بھی شا مل ہیں ۔ ادھرباجوڑایجنسی میں تحصیل اتمان خیل کے علاقے میں غازی بابا مزار کے قریب بم دھماکہ ہوا جس میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ذرائع کے مطابق رات کو نامعلوم افراد نے مزار کے قریب بارودی مواد نصب کیاتھا جو کہ جمعہ کی علی الصبح زور دار دھماکے سے پھٹ گیا۔ دھماکے کے نتیجے میں مزار کے دوکمرے مکمل طورپر تباہ ہوگئے ہیں۔ پولیٹیکل انتظامیہ نے واقعے کی تحقیقات شروع کردی ہیں ۔ کسی نے واقعے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہیں۔ جبکہ فرنٹیئر کور نے بلوچستان کے مختلف اضلاع میں سرچ آپریشن کیا، جھڑپ اور فائرنگ کے تبادلہ میں 13 دہشت گرد ہلاک جبکہ کارروائی کے دوران3 ایف سی اہلکار زخمی ہوگئے،میڈیا رپورٹس کے مطابق جمعہ کے روز ایف سی نے مستونگ،پنجگور اور قلات میں دہشت گردوں کے خلاف سرچ آپریشن کیا اور مختلف مقامات پر چھاپہ مارا اس دوران ایف سی اور دہشت گردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا جس کے نتیجے میں 13 دہشت گرد مارے گئے اور متعدد زخمی ہوگئے۔کارروائی کے دوران 3 ایف سی اہلکار بھی زخمی ہوئے۔ایف سی کے ترجمان کے مطابق دہشت گردوں کے خلا ف کارروائی میں400 ایف سی اہلکاروں نے حصہ لیا اور دہشت گردوں کے خلاف سرچ آپریشن میں گن شپ ہیلی کاپٹروں کا استعمال بھی کیا جس سے متعدد ٹھکانے تباہ ہوگئے جبکہ کارروائی کے دوران کئی گھنٹوں تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا جس سے13 دہشت گرد ہلاک ہوگئے اور متعدد دہشت گردوں کو زخمی حالت میں گرفتار کر لیا ہے جنہیں نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے جہاں ان سے پوچھ گچھ جاری ہے ،ایف سی ترجمان کے مطابق اس کارروائی کے دوران 3 سکیورٹی اہلکار معمولی زخمی ہوئے ہیں ، دہشت گردوں کے زیر استعمال بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد کیا گیا ہے ، ابتدائی تحقیقات کے مطابق ہلاک اور زخمی ہونے والے دہشت گرد سکیورٹی فورسز پر حملے اور مستونگ میں متعدد کارروائیوں میں ملوث رہے ہیں اور پولیس کو مختلف مقدمات میں مطلوب تھے۔ دوسری جا نب جمعہ کی صبح کراچی کے مختلف علاقوں میں پولیس اور رینجرزنے ٹارگٹڈ آپریشن کیا،19افراد کے قتل میں ملوث ٹارگٹ کلر سمیت107ملزمان گرفتاراوربھاری تعداد میں اسلحہ برآمدکرلیاگیا ۔ تفصیلات کے مطابق رینجرز اور پولیس نے عیسیٰ نگری،گلشن اقبال،گلستان جوہر،ڈالمیا، میں ٹارگٹڈ آپریشن کرتے ہوئے داخلی و خارجی راستوں کو رکاوٹیں لگا کر بند کر دیا اور کسی بھی شخص کو علاقے سے باہر یا اندر جانے کی اجازت نہیں تھی۔ پولیس اور ینجرز نے گھر گھر تلاشی لی اور مخبر خاص کی نشاندہی پر چھاپے مارے107ملزمان کو حراست میں لے کر تفتیش کے لئے نا معلوم مقام پر منتقل کر دیا، گرفتار ملزمان کا تعلق سیاسی ،مذہبی،کالعدم،جماعتوں سے ہے اور گرفتار ملزمان کئی وارداتوں میں ملوث ہے۔ خمیسو گوٹھ میں پولیس نے عالم زیب عرف گنجا کو گرفتار کر کے بھاری تعداد میں مختلف قسم کے ہتھیار برآمد کر لئے۔پولیس نے بتایا کہ ملزم نے9افراد کو قتل کرنے کا اعتراف کیا ہے۔جس مین پولیس اہلکار سیاسی جماعت کے کارکنان شامل ہیں۔ پولیس نے بتایا کہ ملزم کا تعلق سیاسی جماعت سے ہے۔ علاوہ ازیں کراچی میں ایپلس کمیٹی کے خصوصی اجلاس کے بعد پولیس اور رینجرز نے لیاقت آباد سمیت مختلف علاقوں میں چھاپے مارے اور داخلی و خارجی راستوں کو سیل کر کے گھر گھر تلاشی لی اس دوران متعدد افراد کوگرفتار کر کے تفتیش کیلئے نا معلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا۔ گرفتار افراد میں یونٹ انچارج سمیت22متحدہ کارکن قوم پرست و کالعدم تنظیموں کے کارندے مدرسے کا استاد،طلباء اور مجرموں کے4سہولت کار شامل ہیں۔ گزشتہ شب سپر ہائی وے کے علاقے میں افغان بستی کے قریب چھاپہ مار کر 4مشتبہ افراد کو حراست میں لیا گیا۔ جن کے حوالے سے بتایا گیا کہ یہ افراد دہشت گردوں کے سہولت کار ہیں۔ ان کی گرفتاری صفورا گوٹھ میں جائے وقوعہ کے اطراف سے جیو فنسسنگ سے ممکن ہوئی۔کیونکہ ان کے موبائل ڈیٹا کے مطابق اس و قت ان کا رابطہ صفورا گوٹھ کے علاقے میں موجود کچھ افراد سے تھا ان کی مدد سے اصل ملزمان تک پہنچنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وہ پمفلٹش جائے وقوعہ سے ملے ہیں۔ایسے ہی پمفلٹس ان افراد کے پاس بھی دیکھے گئے تھے۔جب کہ ایک انٹیلی جنس اطلاع پرقوم پرست تنظیم کے دہشت گردوں کی موجود گی کی اطلاع پر سیکورٹی اداروں نے صفورا گوٹھ کے قریب قائم گل ہاؤسنگ کی عمارت پر چھاپہ مارا جہاں سے کئی اہم گرفتاریاں عمل میں آئی ہیں۔گرفتار افراد کے بیرونی عناصر سے تعلق کی تحقیقات کی جارہی ہیں،

مزید : صفحہ اول


loading...