حکومت دوران زچگی اموات کو کم کرنے کیلئے کامیاب پروگرام پر عمل پیرا ہے،سلمان رفیق

حکومت دوران زچگی اموات کو کم کرنے کیلئے کامیاب پروگرام پر عمل پیرا ہے،سلمان ...

لاہور( جنرل رپورٹر) محکمہ صحت پنجاب صوبے میں مدر اینڈ چائلڈ اور تولیدی صحت کی بہتری،دوران زچگی حاملہ خواتین اور نومولود بچوں کی شرح اموات کنٹرول کرنے کے لئے ایک مربوط پروگرام کو کامیابی سے چلارہا ہے اور اس شعبہ میں کام کرنے والی غیر سرکاری سماجی تنظیموں کی حوصلہ افزائی اور ان کے ساتھ تعاون کے لئے تیار ہے۔یہ بات مشیر صحت پنجاب خواجہ سلمان رفیق نے سول سیکرٹریٹ میں ایک غیرسرکاری سماجی تنظیم’’ شرکت گاہ ‘‘ کے وفد سے ملاقات کے دوران کہی۔ وفد کی قیادت شرکت گاہ کی چیئرپرسن فریدہ شاہد کررہی تھیں۔اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر زاہد پرویز،ڈپٹی سیکرٹری ہیلتھ ٹیکنیکل ڈاکٹر محمد محسن،ڈپٹی سیکرٹری میڈیکل ایجوکیشن ڈاکٹر ناصر شاکر اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔خواجہ سلمان رفیق نے وفد کو صوبے میں صحت کے شعبے کی ترقی اور ڈاکٹر کمیونٹی کی بہتری کے لئے چیف منسٹر ہیلتھ روڈ میپ کے تحت کئے گئے اقدامات اور پرائمری وسکینڈری ہیلتھ کو بہتر بنانے کے لئے سپیشلسٹ ڈاکٹر کی تعیناتی اور خصوصی پے پیکج کے بارے میں تفصیلی طور پر آگاہ کیا۔ شرکت گاہ کی چیئرپرسن نے مشیر صحت کواپنے ادارے کی طرف سے خواتین کی صحت کے مسائل حل کرنے اور تولیدی صحت کو بہتر بنانے کے لئے جاری سرگرمیوں بارے بتایا۔انہوں نے کہا کہ شرکت گاہ ملینیم ڈویلپمنٹ گولز کے حصول اور ہیلتھ گورننس کو مستحکم کرنے کے لئے چاروں صوبوں میں خدمات سرانجام دے رہی ہے اور پنجاب کے 2 اضلاع وہاڑی اور مظفر گڑھ میں پائلٹ پراجیکٹ چلارہی ہے۔ فریدہ شاہد نے کہا کہ شرکت گاہ حکومت کے ساتھ اپنے اشتراک عمل کو بڑھانے کی خواہشمند ہے تاکہ صوبے میں خواتین وبچوں کی صحت اور تولیدی صحت کے مسائل، بہبود آبادی ،خواتین اور بچوں میں غذائیت کی کمی کے مسائل حل کئے جا سکیں۔ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر زاہد پرویز نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مدر اینڈ چائلڈ ہیلتھ اور تولیدی صحت کے شعبہ میں بہت سی این جی اوز کام کررہی ہیں اورکام کی Over laping ہو رہی ہے ۔یہی وجہ ہے کہ حکومتی شعبہ میں لیڈی ہیلتھ ورکرز پروگرام، مدر اینڈ چائلڈ ہیلتھ اور ری پروڈکٹو ہیلتھ کو یکجا کرکے ایک مربوط پروگرام شروع کیا گیا ہے جس کو ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر اعجاز شیخ چلا رہے ہیں۔ ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...