گرین ٹرین کے دورانیے میں 75 منٹ کمی، شکایت سیل بھی قائم کر دیا گیا

گرین ٹرین کے دورانیے میں 75 منٹ کمی، شکایت سیل بھی قائم کر دیا گیا
گرین ٹرین کے دورانیے میں 75 منٹ کمی، شکایت سیل بھی قائم کر دیا گیا

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) محکمہ ریلوے نے گرین ٹرین کے دورانیے میں مزید 75 منٹ کی کمی کر دی ہے اور مسافروں کی دادرسی کیلئے شکایت سیل بھی قائم کرنے کافیصلہ کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ ریلوے کا اہم اجلاس ہوا جس میں گرین ٹرین سروس کو مزید بہتر بنانے اور مسافروں کی شکایات کا ازالہ کرنے کے عزم کا اظہار کیا گیا۔ ریلوے کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ ٹرین کے سفر کے دورانیے میں 75 منٹ کی کمی کر دی گئی ہے اور اب یہ ٹرین 22 گھنٹوں میں اسلام آباد سے کراچی پہنچے گی جبکہ اس میں موجود وائی فائی کی سہولت کو بھی مزید بہتر بنایا جائے گا۔

ترجمان کے مطابق گرین ٹرین میں سفر کرنے والے مسافروں کی شکایات دور کرنے کیلئے مرکزی شکایت سیل بھی قائم کیا جائے گا اور اجلاس میں ہونے والے تمام فیصلوں کا اطلاق 22 مئی سے ہو گا۔ واضح رہے کہ اسلام آباد سے کراچی اور لاہور کیلئے نئی شروع ہونے والی ”گرین ٹرین“ کا افتتاح وزیراعظم نواز شریف نے کیا اور اس موقع پر انہوں نے اس ٹرین کی بالخصوص باتھ رومز کی خوب تعریف کی اور کہا کہ ریلوے کی وزارت موجودہ حکومت کی بہترین وزارتوں میں سے ایک ہے جبکہ خواجہ سعد رفیق کا انتخاب بھی درست ثابت ہوا ہے جنہوں نے ریلوے کو ترقی کی راہ پر ڈال دیا ہے۔

ابتدائی طور پر یہ خبریں بھی سامنے آئی تھیں کہ نئی بوگیوں پر مشتمل اس ٹرین کیلئے پرانے انجن کا انتخاب کیا گیا جو 20 کلومیٹر فاصلہ طے کرنے کے بعد ہانپ اٹھا اور بوگیاں چھوڑ کر خود چلتا بنا۔ یہ ٹرین اپنا ابتدائی سفر طے کرتے ہوئے لاہور پہنچی تو مسافروں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ حکومت نے صرف سبز باغ دکھائے ہیں اور مہنگی ٹکٹ کے عوض نہ تو کھانا دیا اور نہ ہی وائی فائی چلا تاہم کچھ دوسرے مسافروں کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے یہ ٹرین سروس بہترین اقدام ہے اور اس میں مزید بہتری سے مسافر مزید آرام سے سفر کر سکیں گے۔

دوسری جانب خواجہ سعد رفیق نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہ حکومت نے جو سہولیات متعارف کرائی ہیں وہ من و عن عوام کو فراہم کی گئی ہیں۔

مزید : بزنس /اہم خبریں


loading...