دنیا کا وہ شہر جہاں کو ئی بھی انسان بے گھر نہیں ،یہ کیسے ممکن ہوا ؟جان کر آپ بھی عش عش کر اٹھیں گے

دنیا کا وہ شہر جہاں کو ئی بھی انسان بے گھر نہیں ،یہ کیسے ممکن ہوا ؟جان کر آپ ...
دنیا کا وہ شہر جہاں کو ئی بھی انسان بے گھر نہیں ،یہ کیسے ممکن ہوا ؟جان کر آپ بھی عش عش کر اٹھیں گے

  


اوٹاوا (نیوز ڈیسک) اگر حکمرانوں کی نیت صاف ہو اور ان کے دل میں رعایا کا احساس ہو تو فلاحی ریاست کا خواب پورا کرنا ہرگز ناممکن نہیں۔ کینیڈا میں حکومت نے اس بات کو واقعی سچ کردکھایا ہے کہ ریاست ہر شہری کو گھر جیسی بنیادی سہولت فراہم کرسکتی ہے۔ اگرچہ پورے ملک میں کوشش کی جارہی ہے کہ کوئی بھی بے گھر نہ رہے لیکن میڈیسن ہیٹ شہر سب پر سبقت لے گیا ہے۔ اس شہر کی حکومت نے 2009ءمیں عوام سے وعدہ کیا تھا کہ ہر شہری کو گھر کی سہولت مہیا کی جائے گی اور آج اس شہر میں کوئی شخص بے گھر نظر نہیں آتا۔

مزیدپڑھیں:چینی ارب پتی نےجاپانی فحش اداکارہ خرید لی،قیمت اتنی کہ ہوش اڑا دے

شہر کے میئر ٹیڈ کلگسٹن نے سی بی سی ریڈیو سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ انہیں جب بھی کسی بے گھر شخص کے بارے میں خبر ملتی ہے تو 10 دن کے اندر اسے نیا گھر دے دیا جاتا ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ 10 دن زیادہ سے زیادہ دورانیہ ہے جبکہ اکثر اس سے بہت پہلے رہنے کی جگہ فراہم کردی جاتی ہے۔ انہوں نے اپنے شاندار پراجیکٹ کی وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ اکثر مغربی شہروں میں یہ پالیسی اپنائی جاتی ہے کہ سڑکوں پر پڑے نشہ بازوں اور بیماروں کو اس وقت تک رہائش مہیا نہیں کی جاسکتی جب تک وہ نشہ چھوڑ نہ دیں یا اپنی صحت بہتر نہ کرلیں۔ ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے ایک مختلف پالیسی اپنائی اور نشے اور بیماری میں مبتلا بے گھر لوگوں کو علاج سے پہلے گھر فراہم کرنے کا منصوبہ شروع کیا۔ انہوں نے بتایا، ”اگر آپ نشے کے عادی ہیں یا بیمار ہیں اور کسی پارک کے بینچ پر یا فٹ پاتھ پر سوتے ہیں تو آپ کی بہتری کی امید بہت کم ہے۔ درست طریقہ یہ ہے کہ پہلے آپ کو گھر کا آرام فراہم کیا جائے۔ آپ کی نشے کی عادت یا بیماری خود بخود ٹھیک ہوجائے گی۔“

میڈیسن ہیٹ کی انسان دوست پالیسی نے نہ صرف شہریوں کے دل جیت لئے ہیں بلکہ اسے فلاحی حکومت کی روشن مثال کے طور پر ساری دنیا میں سراہا جارہا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...