خواتین کی وہ باتیں جو مرد کتنی بھی کوشش کر لیں کبھی سمجھ نہی آئیں گی

خواتین کی وہ باتیں جو مرد کتنی بھی کوشش کر لیں کبھی سمجھ نہی آئیں گی
خواتین کی وہ باتیں جو مرد کتنی بھی کوشش کر لیں کبھی سمجھ نہی آئیں گی

  

نیویارک(نیوزڈیسک)آپ دنیا کا کوئی بھی مشکل ترین کام بخوبی سرانجام دے سکتے ہیں لیکن خاتون کو سمجھنا کسی بھی مشکل کام سے بھی مشکل ہے۔ خواتین کی کئی باتیں ایسی ہوتی ہیں جنہیں مرد بالکل بھی نہیں سمجھ سکتے،آئیے آپ کو کچھ ایسی ہی باتوں کے بارے میں بتاتے ہیں۔

میں پریشان نہیں

اگر خاتون یہ کہے کہ وہ پریشان نہیں ہے تو اس بات کو سنجیدگی کے ساتھ نہ لیں کیونکہ حقیقت یہ ہے کہ وہ پریشان ہے لیکن آپکو سچ نہیں بتارہی۔کوئی بھی قدم اٹھانے سے پہلے یہ بات ذہن میں رکھیں کہ وہ پریشان ہے لیکن اس طرح شو کررہی ہے جیسے وہ نارمل ہو۔

تمہیں بات کرنی نہیں آتی

آپ کو اپنی سوجھ بوجھ پر مان ہے لیکن اگریہ جملہ یا اس سے ملتی جلتی بات سننے کو ملے تو سمجھ لیں کہ لڑکی کا مطلب ہے کہ آپ کو اس کے ساتھ متفق ہونا ہوگا۔

کیا یہ کام ابھی کرنا تھا

اس کاامطلب ہے کہ فوری طور پر اس کام کو بند کردو۔آپ لاکھ کہیں کہ یہ انتہائی ضروری کام ہے لیکن وہ آپ کی بات کبھی نہیں سنے گی اور ہرحال میں یہ کام بند کرواکر دملے گی۔

بہت شکریہ

اس جملے پرخوش ہونے کی ضرورت نہیں کیونکہ اس کا مطلب ہرگز وہ نہیں جو آپ سمجھ رہے ہیں لہذا خاموشی اختیار کریں۔آپ کی جانب سے کی گئی کوئی بھی بات آپ کے خلاف استعمال ہوسکتی ہے۔

فکر نہ کرو

اگرآپ کو کہا جائے کہ اس بات کی فکر نہ کروتو ااپ کو چاہیے کہ اس بات کی سب سے زیادہ فکر کرنی ہے۔آپ کے ہمسفر کا خیال ہے کہ آپ اس کی باتوں کا دھیان نہیں رکھ رہے اور وہ طنزیہ طور پر ایسے کہہ رہی ہے لہذاآگے آپ خود سمجھ دار ہیں۔

جہاں چاہتے ہو وہیں چلتے ہیں

اس بات کا مطلب ہے کہ صرف اس جگہ جانا ہے جہاں اس کا دل کررہاہے لہذا اپنی رائے دے کر وقت بربادمت کرو۔

کیا کررہے ہو

جو بھی کررہے ہو بالکل غلط ہے لہذا میری رائے لو تاکہ یہ کام ٹھیک ہوسکے۔

ہمیں بات کرنی ہوگی

یعنی کہ میری بات درست ہے اور تمہیں ماننی ہوگی۔

پانچ منٹ

ایک منٹ کا مطلب10منٹ سمجھو اور پانچ منٹ خود سمجھ لو کتنے ہوں گے،اگر ایک گھنٹے سے پہلے آجاﺅں گی تو یہ میری عظمت ہوگی۔

شائد

اگر کسی بات پر وہ یہ لفظ’شائد‘کہہ دیں تو سمجھ لیں کہ انکار ہے لہذا اپنا وقت برباد نہ کریں۔

ہاں

اس کا مطلب اکثر موقعوں پر نہیں ہوتا اور کبھی کبھار اسے ’ہاں‘سمجھنا چاہیے۔

نہیں

یہ وہ واحد لفظ ہے جس کا مطلب وہی ہے جو کہا جارہا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -