کڈنی سنٹر سپروائزر کی انتقامی کارروائیاں‘ درجہ چہارم کے ملازمین ٹارگٹ

کڈنی سنٹر سپروائزر کی انتقامی کارروائیاں‘ درجہ چہارم کے ملازمین ٹارگٹ

ملتان(وقائع نگار) کڈنی سنٹر کے سپروائزر نے ناجائز خواہشات پوری نہ کرنے والے درجہ چہارم ملازمین کو نشانے پر رکھ لیا ہے۔جسکی وجہ سے ملازمین شدید پریشانی سے دوچار ہیں(بقیہ نمبر44صفحہ12پر )

۔۔اس بارے میں معلوم ہوا ہے۔کہ کڈنی سنٹر کی نجکاری کے بعد انڈس گروپ نے ہسپتال کو چلانے کے لئے اپنی علیحدہ ٹیمیں تشکیل دیں۔جبکہ اسی طرح درجہ چہارم کے ملازمین کی ڈیوٹی۔چھٹی۔ودیگر معاملات کو سنبھلنے کیلئے تین شفٹوں کا الگ الگ ایک سپروائزر مقرر کیا گیا۔ذرائع کے مطابق درجہ چہارم کے ملازمین کا سپروائزر محمد عرفان نے اپنے ماتحت عملے کو روزانہ بلاوجہ کسی نا کسی بہانے سے تنگ کرنا شروع کیا ہوا ہے۔انکی ڈیوٹیاں تبدیل کرنے یا ملازم کی مرضی سے ڈیوٹی لگانے کے لئے کبھی رقم۔کبھی ہوٹل پر کھانا کھانے جیسی اور بھی خواہشات کا اظہار کرتا ہے۔اور جو یہ سب باتیں پوری نا کرے انکو بس بلاوجہ تنگ کرتا رہتا ہے۔ جسکی وجہ سے یہ سب ملازمین شدید پریشانی میں مبتلا ہیں۔ملازمین کا کہنا ہے اسکی اگر ناجائز بات نا مانی جائے تو غلط رپورٹ ہسپتال انتظامیہ کو بھیج دیتا ہے۔۔۔ملازمین نے مذکورہ صورت حال پر فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔جبکہ کڈنی سنٹر انظامیہ کے مطابق اس بارے میں کوئی تحریری شکایت موصول نہیں ہوئی۔

کڈنی سنٹر سپروائزر

مزید : ملتان صفحہ آخر