شریفل بی بی کیس کی رپورٹ پشاور ہائیکورٹ میں پیش کر دی گئی

شریفل بی بی کیس کی رپورٹ پشاور ہائیکورٹ میں پیش کر دی گئی

پشاور(نیوزرپورٹر)ڈیرہ اسماعیل خان کی انویسٹی گیشن پولیس نے شریفاں بی بی کیس کی رپورٹ پشاورہائی کورٹ میں پیش کردی ہے جبکہ پشاورہائی کورٹ نے مرکزی ملزم کی گرفتاری کے لئے پولیس کو ا یک ماہ کی مہلت دے دی اورکیس کی سماعت26جون تک ملتوی کردی عدالت عالیہ کے چیف جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس سید افسرشاہ پرمشتمل دورکنی بنچ نے ڈیرہ اسماعیل خان میں بااثرافراد کے ہاتھوں سرعام برہنہ ہونے والی شریفاں بی بی کی جانب سے دائر رٹ کی سماعت کی اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ ڈیرہ اسماعیل خان میں بااثرافراد نے درخواست گذارہ کو سرعام برہنہ کیااورمختلف بازاروں میں گھمایا تاہم ملزم تاحال گرفتارنہیں ہوسکے اوربااثرہونے کی بناء اسے اب بھی ہراساں کیاجارہا ہے اس موقع پر ڈی ایس پی انویسٹی گیشن خالدعثمان عدالت میں پیش ہوئے اوربتایا کہ شریفاں بی بی کیس میں تاحال آٹھ ملزموں کو گرفتارکیاجاچکاہے تاہم مرکزی سجاول کاکوئی اتہ پتہ نہیں اوراس کی تلاش جاری ہے اورگرفتاری کے لئے چھاپے مارے جارہے ہیں انہوں نے انویسٹی گیشن رپورٹ عدالت میں پیش کی فاضل بنچ نے مرکزی ملزم کی گرفتاری کے لئے ایک ماہ کی مہلت دے دی اورہدایات جاری کیں کہ ملزم کی گرفتاری کے لئے اقدامات جاری رکھے جائیں اورسماعت26جون تک ملتوی کردی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر