مظفر آباد، 13بڑے ہسپتالوں میں فری میڈیکل کی سہولیات پر عملدرآمدر نہ ہو سکا

مظفر آباد، 13بڑے ہسپتالوں میں فری میڈیکل کی سہولیات پر عملدرآمدر نہ ہو سکا

مظفرآباد(بیورورپورٹ)مظفر آباد کے 13بڑے ہسپتالوں میں فری میڈیکل کی سہولیات کے دعوئے ہوائی ثابت ، پوسٹر لٹکانے سے بھی کام نہ چل سکا، سی ایم ایچ مظفرآباد میں زچہ و بچہ ایمرجنسی کیس میں فوری امداد کے وعدے بھی کام نہ آسکے ۔ وزیر اعظم آزادکشمیر کی طرف سے مفت ایمرجنسی کے وعدے سابق ہوائی اعلانات کی طرح صرف باتوں تک محدود ،ایمز ، ڈینٹل ہسپتال پلیٹ، بی ایچ یوز ،ڈی ایچ کیو ہسپتالوں سمیت چھوٹی بڑی ڈسپنسریاں بھوت بنگلہ میں تبدیل ، پرائیویٹ ہسپتالوں کی چاندی ،رش ریکارڈ قائم کرنے لگے ۔ دن رات مریضوں کی بڑی بڑی لائنیں حکومتی دعوؤں کے پول کھولنے لگے ۔ سی ایم ایچ تو نو گر ایریاء بن کر رہ گیا ۔ جبکہ ڈینٹل ہسپتال سنٹر پلیٹ آلودہ اوزاروں کے زریعے موزی امراض پھیلانے کو موجب بننے لگا ۔ محکمہ صحت نے مکمل چپ سادھ لی ،گزشتہ روز خبریں سروے میں مریضوں سمیت دور داراز علاقوں سے علاج معالجہ کی غرض سے آئے لوگوں نے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ سی ایم ایچ میں گیٹ سے لیکر ایمرجنسی تک لوٹ مار کے نت نئے طریقے متعارف کروا لیے گئے ہیں ۔ جبکہ ڈیوٹی پر تعینات لوگوں نے عوم کی تذلیل کو وطیرہ بنا رکھاہے ۔ حکومت کی جانب سے مفت ایمرجنسی کے اعلانات محض سہانا سپنا ہیں ۔ ہسپتال کی ایمرجنسی تک پہنچنے کیلئے کتنے پاپڑ بیلنا پڑتے ہیں یہ توصرف مریض یا اس کے ساتھ آئے ہوئے تیماردار ہی جانتے ہیں ۔ اور پھر اگر خوش قسمتی سے مریض کو ایمرجنسی تک پہنچا دیا جائے تو وہاں پر ڈسپرین کی ایک گولی سے لیکر سرنج تک خود مہیا کرنی ہوتی ہے ۔ اگر کسی کہ پاس یہ چیزیں میسر نہ سکیں تو پھر مریض ایڑیاں رگڑ رگڑ کر اللہ کو پیارا ہو جاتا ہے ۔ مگر قصائی نما ڈاکٹر ز کو زرا برابر ترس نہیں آتا حکومت نے مفت ایمرجنسی کا اعلان تو کر دیا مگر مفت ادویات فراہمی کا اعلان نہ کر کے اپنا دامن صاف بھی رکھا ہے ،سادہ لوح عوام مفت ایمرجنسی کو مفت ادویات سمجھ کر دوڑی دوڑی چلی آتی ہے مگر ہسپتال آکر انہیں معلوم نہیں ہوتا ہے کہ ادویات اور دیگر علاج معالجہ کا سامان تو خود ہی لانا ہے ، عوام الناس نے حکومت آزادکشمیر ،چیف سیکرٹری آزادکشمیر اور دیگر ارباب اختیار سمیت چیف جسٹس سے مطالبہ کیا ہے کہ ہسپتالوں کی حالت زار پر توجہ دی جائے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...