’’اپنا جوہری پروگرام ختم کرنے کے لیے تیارہے لیکن اگر۔ ۔ ۔ ‘‘ شمالی کوریا ایک مرتبہ پھر میدان میں آگیا، ایسا اعلان کردیا کہ ٹرمپ کے پیروں تلے سے بھی زمین نکل گئی

’’اپنا جوہری پروگرام ختم کرنے کے لیے تیارہے لیکن اگر۔ ۔ ۔ ‘‘ شمالی کوریا ...
’’اپنا جوہری پروگرام ختم کرنے کے لیے تیارہے لیکن اگر۔ ۔ ۔ ‘‘ شمالی کوریا ایک مرتبہ پھر میدان میں آگیا، ایسا اعلان کردیا کہ ٹرمپ کے پیروں تلے سے بھی زمین نکل گئی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

سیئول(ویب ڈیسک) شمالی کوریا نے امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات ختم کرنے کی دھمکی دے دی۔

 شمالی کوریا کا کہنا ہے کہ وہ اپنے جوہری ہتھیاروں کے پروگرام کوختم کرنے کے لیے تیارہے لیکن اگر امریکا نے جوہری ہتھیاروں کو ختم کرنے کے لیے دباؤ ڈالا تو وہ ٹرمپ کے ساتھ اگلے ماہ 12 جون کو طے شدہ ملاقات کومنسوخ کرنے کے بارے میں سوچ سکتے ہیں۔شمالی کوریا کے سرکاری میڈیا نے ملک کے نائب وزیرخارجہ کم گیگوان کے حوالے سے کہا ہے کہ اگر امریکا نے ہمیں دیوارسے لگایا اوریکطرفہ طورپرجوہری ہتھیاروں کو ختم کرنے کا کہا تو ہمیں مذاکرات میں کوئی دلچسپی نہیں رہے گی۔ 

دوسری جانب امریکی محکمہ خارجہ نے کہا ہے کہ وہ صدرٹرمپ اور کم جانگ ان سے ملاقات کی تیاریاں جاری رکھے ہوئے ہیں اور انہیں شمالی کوریا کے موقف میں کسی تبدیلی کا کوئی علم نہیں ہے۔

اس سے قبل مارچ میں امریکی صدرٹرمپ نے اپنے شمالی کوریا کے ہم منصب کی ملاقات کی دعوت کوقبول کرلیا تھا جس سے دنیا حیران رہ گئی تھی۔

واضح رہے کہ شمالی کوریا جنوبی کوریا کی امریکی افواج کے ساتھ مشترکہ مشقوں پرناراض ہے جب کہ شمالی کوریا نے فوجی مشق کو اشتعال انگیزقراردیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی