’’ اگلے 6 سے 8 ماہ میں کریڈٹ کارڈ وغیرہ ختم ہو جائیں گے اور ساری ادائیگیاں ۔ ۔ ۔ ‘‘ وزیر سائنس و ٹیکنالوجی نے ایسا اعلان کردیا کہ پاکستانیوں کیلئے یقین کرنا مشکل

’’ اگلے 6 سے 8 ماہ میں کریڈٹ کارڈ وغیرہ ختم ہو جائیں گے اور ساری ادائیگیاں ۔ ۔ ...
’’ اگلے 6 سے 8 ماہ میں کریڈٹ کارڈ وغیرہ ختم ہو جائیں گے اور ساری ادائیگیاں ۔ ۔ ۔ ‘‘ وزیر سائنس و ٹیکنالوجی نے ایسا اعلان کردیا کہ پاکستانیوں کیلئے یقین کرنا مشکل

  

اسلام آباد  (ویب ڈیسک) وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ اگلے چھ سے آٹھ مہینے ساری ادائیگیاں موبائل کے ذریعے ہوں گی، کریڈٹ کارڈ وغیرہ ختم ہو جائیں گے، کیش اکانومی کو موبائل پر لے کر آئیں گے، آئندہ 10 سالوں میں 7 ٹیکنالوجیز دنیا کو بالکل بدل دیں گی،بغیر ڈرائیور کے گاڑیاں آجائیں گی، دس سالوں میں ڈرائیونگ سے وابستہ لاکھوں نوکریاں قائم نہیں رہ سکیں گی۔انہوں نے قائمہ کمیٹی برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کو آگاہ کیا کہ رویت ہلال سے متعلق قمری کیلنڈ ر 15 رمضان تک تیار ہو جائے گا،امریکیوں  کا قمری کیلنڈر حرام ہے، ہم بنائیں گے تو حلال ہو جائے گا۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی کا اجلاس چیئرمین ساجد مہدی کی زیر صدارت ہوا جس دوران  وفا قی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے بتایا کہ رویت ہلال کمیٹی کے اجلاس پر چالیس لاکھ کے قریب خرچہ آتا ہے ۔ سعد رفیق نے کہا کہ روایت بھی ہونی چاہئے اور ٹیکنالوجی بھی ہونی چاہئے۔ فواد نے کہا کہ پی سی ایس آئی آر کی کل سولہ لیب کام کر رہی ہیں، پاکستان بھر میں 9 ریسرچ سینٹر اور 7 لیبارٹریز ہیں، دینا بھر کے برانڈ پاکستانی اشیا سے اپنا نام بنا رہے ہیں  جس پر چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ جب تک کسی ٹیکنالوجی کو آگے ٹرانسفر نہ کیا جائے تو اس ٹیکنالوجی کی ایجاد کا کوئی فائدہ نہیں۔

فواد چودھری نے کہا کہ اگست میں ہم لوکل جیولری کو بھی شو کیس کریں گے، ہم نے پانچ سالوں میں سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں ریسرچ پر 80 کروڑ خرچ کیا جبکہ بھارت نے 2 ٹریلین خرچ کیا ہے۔ پی سی ایس آئی آر حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ ہم پنشن ختم کرنے جا رہے ہیں، ہم سی پی فنڈ پر چلے جائیں گے۔ سعد رفیق نے کہا کہ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی سب سے نظر انداز وزارت ہے، فواد اسے سنجیدہ لے رہے ہیں جو کہ اچھی بات ہے۔

مزید : قومی