بالآخر سائنسدانوں نے 600 سال پرانی تحریر کا مطلب دریافت کرلیا، اور سمجھ آئی تو فوراً شرم سے چہرے لال ہوگئے

بالآخر سائنسدانوں نے 600 سال پرانی تحریر کا مطلب دریافت کرلیا، اور سمجھ آئی تو ...
بالآخر سائنسدانوں نے 600 سال پرانی تحریر کا مطلب دریافت کرلیا، اور سمجھ آئی تو فوراً شرم سے چہرے لال ہوگئے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ماہرین کو کھدائی کے دوران ایک دیوار پر 600سال قدیم تحریر اور کچھ نقش و نگار ملے۔ اب تک درجنوں ماہرین نے اس تحریر کو پڑھنے اور اس کا مطلب سمجھنے کی کوشش کی لیکن ناکام ہوئے، جس پر اسے دنیا کی پراسرار ترین عبارت قرار دیا گیا۔ اب ڈاکٹر گیرارڈ چیشائر نے اس تحریر کا مطلب دریافت کر لیا ہے، جو ایسا شرمناک تھا کہ ڈاکٹر گیرارڈ کے گال بھی شرم سے لال ہو گئے۔ میل آن لائن کے مطابق اس تحریر میں جنسی تعلق کے طریقے، مردانہ کمزوری کے جڑی بوٹیوں سے علاج اور اس زمانے کے کچھ عقائد کے بارے میں لکھا ہوا تھا۔

یہ تحریر مخصوص کوڈز اور میجک سپیلز پر مشتمل تھی جسے پڑھنا انتہائی دشوار تھا۔ یونیورسٹی آف برسٹل کے ماہر ڈاکٹر گیرارڈ کو اپنی ٹیم کے ساتھ اس تحریر کو ڈی کوڈ کرنے میں 2ہفتے لگے۔ انہوں نے بتایا کہ اس تحریر میں نسوانی ذہن، بچہ پیدا ہونے کے بعد ماں باپ کے احساسات اور جنسیت کے متعلق علم نجوم کے بارے میں بھی لکھا ہوا تھا۔رپورٹ کے مطابق ڈاکٹر گیرارڈ نے مزید بتایا کہ یہ کوڈز اور جادوئی سپیلز پر مشتمل تحریر ڈومینیکن مسیحی مذہبی خواتین (Nuns)نے ایراگون کی ملکہ ماریا کے ریفرنس کے لیے لکھی تھی۔ اس میں ملکہ ماریا کی ایک تصویر بھی بنائی گئی تھی اور کچھ تصاویر بھی، جن میں خواتین کو برہنہ نہاتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ