ایس او پیز پر عمل نہ کرنیوالے علاقوں میں لاک ڈاؤن سخت کرنے کا فیصلہ کر لیا: شبلی فراز

    ایس او پیز پر عمل نہ کرنیوالے علاقوں میں لاک ڈاؤن سخت کرنے کا فیصلہ کر لیا: ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)ملک بھر میں کووِڈ 19 کے بڑھتے ہوئے کیسز اور عوام کی جانب سے اسٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجرز (ایس او پیز) اور کورونا وائرس کی روک تھام کی احتیاطی تدابیر کی خلاف ورزی کی رپورٹس پر حکومت نے خلاف ایس او پیز پر عمل نہ کر نے والے علاقوں میں لاک ڈاؤن سخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ایک انٹرویومیں وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے کہاکہ ہم عوام کو رعایت دے رہے ہیں کیوں کہ مارکیٹس اور مقامات کافی عرصے بعد کھلی ہیں۔انہوں نے تسلیم کیا کہ انہیں ایسی رپورٹس موصول ہوئی ہیں کہ بہت سے علاقوں میں دکاندار اور عوام، حکومتی ایس او پیز اور ہدایات پر عمل نہیں کررہے۔شبلی فراز نے کہاکہ ہم باریک بینی سے صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں، اور بہت جلد اس بات کا فیصلہ کریں گے کہ کن علاقوں کو مکمل بند کیا جائے تاہم جن علاقوں میں زیادہ تر عوام احتیاطی تدابیر اپنا رہے ہیں وہاں موجودہ انتظامات جاری رہیں گے۔وزیر اطلاعات نے کہا کہ حکومت پنجاب نے ایس او پیز کی خلاف ورزی کی اطلاعات پر لاہور میں کچھ شاپنگ سینٹرز اور مارکیٹس کو بند کردیا ہے۔اس معاملے کو مشکل‘ قرار دیتے ہوئے انہوں نے ایس او پیز کی خلاف ورزی پر جرمانوں اور عوام کو سزا کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ یہ غریب افراد بالخصوص یومیہ اجرت والوں کے ساتھ ناانصافی ہوگی۔اجلاس میں وزرائے اعلیٰ کی غیر حاضری کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں وزیر اطلاعات نے کہا کہ یہ قومی رابطہ کمیٹی کا باضابطہ اجلاس نہیں تھا اور وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا اور پنجاب کو ان کے صوبوں سے متعلق کچھ امور پر بات چیت کے لیے مدعو کیا گیا تھا۔

شبلی فراز

مزید :

صفحہ اول -