ٹیلی ویژن کی کامیاب میزبان فرح سعدیہ کی دوسری شادی بھی ناکام

ٹیلی ویژن کی کامیاب میزبان فرح سعدیہ کی دوسری شادی بھی ناکام

  

لاہور(فلم رپورٹر)ٹیلی ویژن کی کامیاب میزبان فرح سعدیہ کی دوسری شادی بھی ناکام ہوگئی ہے۔فرح سعدیہ کو 1998 میں پی ٹی وی سے نشر ہونے والے ڈرامہ سیریل "بندھن”سے شہرت ملی تھی اور اسی ڈرامے کے ذریعے ان کی دوستی ساتھی اداکار اقبال حسین سے ہوئی جس کے کچھ عرصہ بعد دونوں نے شادی کر لی جس میں سے ان کے دو بیٹے پیدا ہوئے جن کے نام عبداللہ اور عبدالرحمٰن ہیں۔ البتہ چند سال بعد ہی ان کے درمیان طلاق ہوگئی۔فرح حسین نے دوسری شادی 2012 میں نہایت خاموشی سے پاکستان کی معروف کاروباری شخصیت چوہدری توقیر احمد سے کی جن کا بزنس پاکستان اور امریکہ میں پھیلا ہوا ہے۔اسلام آباد میں "دیس پردیس”کے نام سے ان کا مشہور ریسٹورنٹ بھی ہے۔ چوہدری توقیر احمد کا تعلق ٹوبہ ٹیک سنگھ کے نواحی گاؤں سے ہے اور وہ بنیادی طور پر شیف ہیں طویل عرصہ امریکہ میں مقیم رہے اور وہیں انہوں نے شادی بھی کی۔فرح سعدیہ اور چوہدری توقیر احمد کی پہلی ملاقات بھی اے ٹی وی کے ایک پروگرام کے دوران ہوئی جس کی میزبان فرح تھیں۔

اسی سے ان کی دوستی کا آغاز ہوا اور کچھ عرصہ بعد انہوں نے خاموشی سے شادی کرلی۔شادی کے موقع پر سابق ڈی جی نیب عابد جاوید اور پی ٹی وی اسلام آباد کے ڈائریکٹر پروگرام امجد بخاری کے علاوہ چند قریبی رشتہ داروں بھی موجود تھے اور یہ نکاح بھی فرح کے گھر پر ہوا تھا۔فرح نے شرط عائد کی تھی اس شادی بارے کسی کو نہ بتایا جائے یہی وجہ ہے کہ آٹھ سال تک اس بارے میں میڈیا کو بھی خبر نہ ہوئی بلکہ اس دوران جب بھی فرح سے دوسری شادی کے بارے میں بات کی گئی تو انہوں نے کسی سوال کا جواب ہی نہیں دیا بلکہ وہ ہمیشہ بات ٹال دیتی تھیں۔فرح سعدیہ کے موجودہ شوہر توقیر احمد پی آئی اے،پی سی لاہور اور سیرینا ہوٹل کابل سمیت کئی بڑے اداروں میں کام کرچکے ہیں جن کا کاروبار کئی ممالک تک پھیلا ہوا ہے۔ ان کی پہلی بیوی دوسال پہلے امریکہ میں کینسر کے باعث انتقال کر گئی تھیں۔ذرائع نے بتایا ہے کہ فرح سعدیہ اور توقیر احمد کے درمیان کچھ عرصہ پہلے اختلافات کا آغاز ہوا جس کی بنیادی وجہ بعض نجی معالات تھے،توقیر احمد کے ایک انٹرویو کے ذریعے یہ انکشاف ہوا کہ وہ فرح سعدیہ کے شوہر ہیں اور انہوں نے فرح کی خواہش پر ہی اتنے سال شادی چھپائے رکھی۔ توقیر احمد نے واضح الفاظ میں بتایا کہ ان کے درمیان مکمل طور پر علیحدگی ہوچکی ہے اور اب واپسی کی گنجائش نہیں ہے۔

مزید :

کلچر -