فیصل آباد، کرونا کی 47سالہ مشتبہ مریضہ رپورٹ آنے سے قبل ہی جاں بحق

  فیصل آباد، کرونا کی 47سالہ مشتبہ مریضہ رپورٹ آنے سے قبل ہی جاں بحق

  

فیصل آباد(سپیشل رپورٹر)فیصل آباد میں ایک اور کرونا کی مشتبہ 47سالہ مریضہ رپورٹ کا انتظار کرتے دم توڑ ہو گئی جبکہ ایف ڈی اے کے ایک اسسٹنٹ ڈائریکٹر میں کرونا وائرس کی تصدیق ہونے پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر اور اہلخانہ کو قرنطینہ کر دیا گیا۔بتایا گیاہے کہ رضا آباد کی رہائشی امین کی بیوی 47سالہ کشور کو 9مئی کو کرونا کی مشتبہ مریضہ ہونے پر جنرل ہسپتال غلام محمد آباد میں منتقل کیا گیا تھا جس کی رپورٹ کا انتظار کیا جا رہا تھا کہ گزشتہ روزوہ جاں بحق ہو گئی جس کو حکومتی ہدایات کے مطابق کرونا ایس او پیز کے مطابق تدفین کی گئی جبکہ محکمہ ایف ڈی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر سانول ملک میں کرونا وائرس کی تصدیق ہونے پر ان کو قرنطینہ کر دیا گیا اور ا نکے والد ملک اعظم جو محکمہ ایف ڈی اے میں بطور ڈائریکٹر فنانس ڈیوٹی سرانجام دے رہے ہیں ان کو بھی گھر میں ہی قرنطینہ کر دیا گیا ہے۔ ڈائریکٹر فنانس کے قرنطینہ ہونے سے محکمہ واسا کے ریگولر اور ڈیلی ویجز ملازمین کی تنخواہیں بھی لیٹ ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔

جاں بحق

مزید :

پشاورصفحہ آخر -