اینٹی کرپشن نے حلیم عادل سمیت 14 افراد کیخلاف تحقیقاتی رپورٹ اعلٰی حکام کو بھجوا دی

  اینٹی کرپشن نے حلیم عادل سمیت 14 افراد کیخلاف تحقیقاتی رپورٹ اعلٰی حکام کو ...

  

کراچی (آئی این پی)وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ کے آبائی ضلع جامشورو کی زمینوں میں کروڑوں روپے کا فراڈ، پی ٹی آئی رہنما حلیم عادل شیخ سمیت 14 افراد کے خلاف اینٹی کرپشن نے تحقیقات مکمل کرکے رپورٹ اعلیٰ حکام کے حوالے کردی ہے۔اینٹی کرپشن کے دستاویز کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ کے آبائی ضلع جامشورو کی زمینوں میں فراڈ کیا گیا اینٹی کرپشن رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ حلیم عادل شیخ نے اپنے فرنٹ مین طارق قریشی کے ذریعے زمین الاٹ کرائی۔اینٹی کرپشن کی رپورٹ کے مطابق سیہون ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور اس وقت کے ڈپٹی کمشنر جامشورو سمیت دیگر کیخلاف تحقیقاتی رپورٹ اعلی حکام کے حوالے کردی گئی ہے جس میں 41کروڑ روپے کی مالیت کی 207 ایکڑ زمین جعلسازی سے الاٹمنٹ کی گئی۔دستاویز کے مطابق سیہون ڈولمپنٹ اتھارٹی اور ریونیو افسران کی ملی بھگت سے 6 مختلف سکیمیں شروع کی گئیں۔ سیہون ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور ریونیو افسران نے مبینہ رشوت کے عوض زمین جعلسازی سے منتقل کرائی، رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سیہون ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے رشوت لیکر غیرقانونی ہاؤسنگ سکیم کے نقشے پاس کرائے۔

اینٹی کرپشن رپورٹ

مزید :

پشاورصفحہ آخر -