نشتر: نئے ہاؤس آفیسر ز بھرتی کرنیکا معاملہ‘ انکوائری میں بے ضابطگیاں ثابت‘ انتظامیہ ذمہ داروں کو بچانے کیلئے سرگرم‘ پی ایم اے کی احتجاج کی دھمکی

  نشتر: نئے ہاؤس آفیسر ز بھرتی کرنیکا معاملہ‘ انکوائری میں بے ضابطگیاں ...

  

ملتان(نمائندہ خصوصی)نشتر میڈیکل یونیورسٹی و ہسپتال میں چند روز قبل نئے ہاوس آفیسرز کو انٹرویو کے ذریعے بھرتی کیا گیا بعد ازاں وارڈ روٹیشن میں میرٹ کی دھجیاں بکیھرتے ہوئے 30 ہاوس آفیسرز جو کہ میرٹ پر(بقیہ نمبر20صفحہ6پر)

تھے انکو نظر انداز کر کے یونیورسٹی کے پروفیسر نے ایک خاتون ہاوس آفیسر کو خلاف میرٹ وارڈ میں ڈیوٹی دی جس پر دیگر ہاوس آفیسرز سمیت پی ایم اے ملتان نے آواز اٹھائی اور باقاعدہ درخواست انتظامیہ کو دی جس پر انکوائری کمیٹی تشکیل دی گئی،پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے مطابق انکوائری کمیٹی نے رپورٹ فائنل کر لی ہے جس میں میرٹ کو نظر انداز کرنے سمیت بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے جبکہ اگلے انٹرویو بھی اب 6 ماہ کے لئے منسوخ کر دئیے گئے ہیں جو کہ مرحلہ وار دوبارہ ہوں گے،تاہم پی ایم اے ملتان کے صدر پروفیسر ڈاکٹر مسعود الروف ہراج نے کہا کہ رپورٹ میں جب یہ بات واضح ہو گئی کہ میرٹ کی دھجیاں اڑائی گئی تاحال ذمہ داران کیخلاف کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی اور نشتر انتظامیہ انکو بچانے کی کوششوں میں مصروف ہے اگر متعلقہ پروفیسر کو آج ہونے والے ہاوس آفیسرز کے انٹرویوز میں بٹھایا گیا تو پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کی جانب سے ڈاکٹر ز بھرپور احتجاج کریں گے اور انٹرویو کے عمل میں خلل کی زمہ داری وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پر عائد ہو گی۔

دھمکی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -