مزدوروں اورروزانہ اجرت پرکام کرنے والوں کیلیئے کتنی رقم کی منظوری ملی؟ بڑی خبرآگئی

مزدوروں اورروزانہ اجرت پرکام کرنے والوں کیلیئے کتنی رقم کی منظوری ملی؟ بڑی ...
مزدوروں اورروزانہ اجرت پرکام کرنے والوں کیلیئے کتنی رقم کی منظوری ملی؟ بڑی خبرآگئی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم  کی جانب سے ایک اور وعدہ وفا ہونے کی امید روشن ہوگئی۔ مزدوروی اور یومیہ اجرت پر کام کرنے والوں میں رقم کی تقسیم کی منظور ی دے دی گئی ہے جس کے تحت مذکورہ افراد میں پچھتر ارب روپے تقسیم کیے جائیں گے۔

ڈان نیوز کے مطابق کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام (بی آئی ایس پی) کے ذریعے مزدوروں اور یومیہ اجرت کمانے والوں میں تقسیم کرنے کے لیے 75 ارب روپے مختص کردیے۔یہ رقم وزیراعظم کی جانب سے مزداروں اور یومیہ اجرت کمانے والوں کے لیے اعلان کردہ 2 کھرب روپے کے ریلیف پیکج کا حصہ ہے جسے اس سے قبل وزارت صنعت و پیداوار اور تجارت کے ذریعے صنعتوں اور کاروباری اداروں کو دیا جانا تھا تا کہ وہ ورکرز کو نوکریوں سے نہ نکالیں۔

ای سی سی کے اجلاس کی صدارت مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کی جس میں ان ورکرز کے لیے ہنگامی نقد معاونت کے طریقہ کار کی منظوری دی گئی جن کے روزگار کورونا وائرس عالمی وبا کے باعث متاثر ہوئے۔ادائیگی کے طریقہ کار پر محکمہ خزانہ، غربت مٹاؤ ڈویژن اور بی آئی ایس پی نے کام کیا۔

بی آئی ایس پی بورڈ نے احساس مزدور (کیٹگری 4) میں رقوم حاصل کرنے والوں کی شناخت کے لیے احساس ایمرجنسی کیش کی کیٹیگری 3 کی اہلیت کے طریقہ کار کو استعمال کرنے کی منظوری دی۔

ڈان نیو ز کے مطابق چنانچہ تصدیق کا عمل بی آئی ایس پی کے سروے اور نادرا میں قومی شناختی رجسٹریشن کے اندراج پر کیا جائے گا۔کیٹیگری 4 میں رقوم حاصل کرنے والوں کو شامل کر کے لیے درخواستیں صرف احساس لیبر پورٹل کے ذریعے وصول کی جائیں گی۔اس طرح 12 ہزار روپے نقد (یکمشت معاونت) کی تقسیم بی آئی ایس پی کے ادائیگی کے موجودہ طریقہ کار کے ذریعے کی جائے گی۔چاروں صوبے، وفاقی دارالحکومت، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر اپنی آبادی کے لحاظ سے احساس مزدور معاونت کے لیے کوٹہ مختص کریں گے۔

خیال رہے کہ 3 مئی کو وزیراعظم نے اعلان کیا تھا کہ کووِڈ 19 وبا ریلیف معاونت فنڈ 2020 کے ذریعے اکٹھی کی گئی رقوم کو مزدوروں اور یومیہ اجرت والوں کے لیے استعمال کیا جائے گا جن کا روزگار لاک ڈاؤن کی وجہ سے بہت متاثر ہوا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -کورونا وائرس -