فلسطین کے مسلمان اور اقوام عالم

فلسطین کے مسلمان اور اقوام عالم
فلسطین کے مسلمان اور اقوام عالم

  

تحریر : سعدیہ مغل 

اسرائیلی بربریت نے انسانیت کوجھنھوڑ دیا ۔فلسطینیوں کے کندھوں پران کے پیاروںکانہیں بلکہ عالمی ضمیر کاجنازہ تھا۔اسرائیلی درندوں سے فلسطینی روزہ داروں اورنمازیوں کے بہیمانہ قتل عام جبکہ مسجد اقصیٰ کے تقدس کی پامالی کاحساب لیاجائے ۔اقوام متحدہ کے دیکھتے دیکھتے فلسطین اورکشمیر بحران مزید شدت اختیار کرگیا ۔کروڑوں مسلمان ایک طرف آزادفضا میں سانس نہیں لے سکتے اوردوسری طرف وہ اپنے بنیادی حقوق سے محروم ہیں۔نہتے فلسطینیوں اورکشمیریوں کی جانوں کاضیاع عالمی ضمیر کی مجرمانہ خاموشی کاشاخسانہ ہے۔ دنیا کاہرمہذب ملک اورباضمیر فرد کشمیریوں اورفلسطینیوں کے حق میں آواز اٹھائے اوران پرظلم وستم کرنیوالے بازوﺅں کوتوڑدے ۔فلسطینی اورکشمیری بھائی اب اپنی منزل مقصود سے زیادہ دور نہیں ہیں ۔فلسطینیوں اورکشمیریوں کی نسل درنسل جہدمسلسل اوران کی بیش قیمت قربانیاں ثمرآورہوں گی پاکستانیوں کے قلوب معتوب فلسطینیوں اورکشمیریوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔

 اسرائیلی بربریت کے باوجود فلسطینی عوام کاصبروتحمل،جذبہ آزادی اوران کی استقامت قابل قدر ہے ۔ اسرائیل اوربھارت ریاستی دہشت گردی کے بل پرفلسطینیوں وکشمیریوں سے ان کے بنیادی حقوق سلب کر سکتے ہیں لیکن ان کی آنکھوں کو آزادی کے خواب دیکھنے سے نہیں روک سکتے۔لگتا یہی ھے کہ  عنقریب فلسطین اورکشمیری مسلمان اپنے زوربازو سے یہودوہنود کے شکنجے کوریزہ ریزہ کرتے ہوئے آزاد ہوں گے اورانہیں اپنے مستقبل بارے فیصلے کرنے کااختیار ہوگا۔

مزید :

بلاگ -