نہتے نمازیوں پر فائرنگ سراسر اسلام دشمنی ہے،قاری زوار بہادر

  نہتے نمازیوں پر فائرنگ سراسر اسلام دشمنی ہے،قاری زوار بہادر

  

لاہور(پ ر) جمعیت علماء پاکستان کے مرکزی رہنماء مفکر اسلام علامہ قاری محمد زوار بہادر نے مقبوضہ بیت المقدس میں مسجد اقصیٰ میں عبادت میں مصروف نہتے نمازیوں پر اسرائیلی افواج کی دہشت گردی کے نتیجے میں خواتین اور بچوں سمیت150افراد کی شہادت، سینکڑوں افراد کے زخمی ہونے اور ہزاروں گھروں کو تباہ کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ نام نہاد انسانی حقوق کے علم برداروں کی نہتے مسلمان نمازیوں پرفائرنگ،آنسو گیس شی بے حسی، بے غیرتی اور اسلام دشمنی کی دلیل ہے ان خیالات کا اظہارانہوں نے جے یو پی پنجاب کے دفتر میں علمائے اکرم کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اجلاس میں حافظ نصیر احمد نورانی،مفتی تصدق حسین،محمد ارشد مہر،رشید احمد رضوی،مولانا سعید احمد نعیم،مولانا شبیر حسین فریدی،مفتی جمیل رضوی،قاری لیاقت علی رضوی،مولانا محمد اعظم قادری،حافظ مستنصر نورانی،حافظ عثمان نورانی اور دیگر علماء نے شرکت کی۔قاری زوار بہادر کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک کے مقدس ایام میں جس دہشت گردی اور بربریت کا مظاہرہ کیا گیا اس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

 انہوں نے او آئی سی،عرب لیگ اور اسلامی ممالک کی جانب سے محض بیان بازی مظلوم فلسطینیوں کے خون سے غداری ہے انہوں نے حکومت پاکستان اور اسلامک سربراہوں سے اسرائیل کے خلاف سخت اقدامات کا مطالبہ کرتے ہوئے مظلوم فلسطینیوں کی بھرپور امداد کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے اسلامی ممالک کے سربراہوں سے مطالبہ کیا کہ اسلامی سربراہان مسجد اقصیٰ میں تشدد اور نہتے فلسطینی عوام کو اسرائیلی ظلم وستم سے محفوظ کرنے کے لئے اسلامی ممالک کی افواج کو فلسطین بھیجا جائے تاکہ دہشت گرد اسرائیل کو سبق سکھایا جا سکے۔ اجلاس میں کہا ہے کہ غزہ پر اسرائیل کا فضائی حملہ اندھا دھند اور غیر ذمہ دارانہ ہے فلسطین میں اسرائیلی فورسز کی پرتشدد کارروائیوں اور حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ کتنی گھنا?نی بات ہے کہ فلسطینیوں پر اسرائیلی نسلی امتیاز اور مظالم جاری ہیں۔ نمازیوں پر حملوں کے مناظر کو مغربی میڈیا پر معمول کی جھڑپیں قرار دینے کی بھی شدید مذمت کی گئی۔  

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -