انسداد کورونا وباء،ورلڈ بینک نے ویکسی نیشن کیلئے پاکستان کیلئے 15کروڑ 30لاکھ ڈالرز امداد کی منظوری دیدی

انسداد کورونا وباء،ورلڈ بینک نے ویکسی نیشن کیلئے پاکستان کیلئے 15کروڑ 30لاکھ ...

  

  نیویارک، اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)ورلڈ بینک نے کہا ہے پاکستان میں کووڈ۔19کی تیسری لہر سے لاکھوں لوگوں کی جان اور روزگار کو خطرہ ہے اور کورونا سے جنگ کے سلسلے میں جاری رقم میں سے 15کروڑ 30 ڈالر پاکستان میں ویکسی نیشن مہم کی معاونت کیلئے مختص کردیے ہیں۔ورلڈ بینک کے بورڈ آف ایگزیکٹو ڈائریکٹرز نے پنڈ یمک رسپانس افیکٹیونیس ان پاکستان(پی آر ای پی)منصوبے کی اپریل 2020ء میں منظوری دی تھی اور اب اس فنڈ میں سے 15کروڑ 30 لاکھ ڈالر کی رقم ازسرنو مختص کی گئی ہے۔ورلڈ بینک کے اعلامیے کے مطابق یہ فنڈز وفاقی حکومت کی درخواست پر دوبارہ جاری کیے جا رہے ہیں جس سے ورلڈ بینک کے معیار پر پورا اترنے والی محفوظ اورموثر کووڈ -19 ویکسین کی خریداری جبکہ منصوبے سے نظام صحت کی استعداد کو مضبوط بنانے میں مدد ملے گی جس سے ویکسی نیشن مہم پر عمل درآمد یقینی بنایا جا سکے گا۔ورلڈ بینک کے پاکستان کے کنٹری ڈائریکٹر ناجی بنہاسین نے کہا پاکستان میں کووڈ۔19کی تیسری لہر مارچ 2021میں نمودار ہوئی اور لاکھوں لوگوں کی جان اور روزگار کو خطرہ ہے۔عالمی بینک اس صحت عامہ کے بحران سے نمٹنے کے سلسلے میں ویکسی نیشن اور وبائی امراض کے معاشرتی اور معاشی اثرات سے نمٹنے کیلئے مدد فراہم کرنے کے حوالے سے پاکستان کی مدد کرنے کیلئے پرعزم ہے۔پاکستان میں ویکسین کیلئے اس مالی اعانت کے علاوہ عالمی بینک نے افغانستان، بنگلہ دیش، نیپال اور سری لنکا میں ویکسی نیشن کی خریداری اور رول آٹ کی کوششوں کی مدد کیلئے مجموعی طور پر 78کروڑ 85 لاکھ ڈالر فراہم کیے ہیں۔مالی اعانت کے علاوہ عالمی بینک جنوبی ایشیائی ممالک کیلئے منصفانہ اور مساوی ویکسین کی حکمت عملیوں کے سلسلے میں تکنیکی مدد اور علم سے متعلق ورکشاپس مہیا کر رہا ہے۔

ورلڈ بینک

مزید :

صفحہ اول -