شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کیلئے قانون کے مطابق کارروائی ہوگی:وفاقی وزراء

  شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کیلئے قانون کے مطابق کارروائی ...

  

 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، نیوز ایجنسیاں) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے شہباز شریف کا نام ای سی ایل پر ڈالنے کی اطلاعات کی تردید کرتے ہوئے کہا عید کے روز شہباز شریف کا نام ای سی ایل پر ڈا لنے کی اطلاعات درست نہیں ہیں۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پراپنے پیغام میں انکا کہنا تھا ابھی تک ایسا کوئی نوٹیفکیشن نہیں ہوا، البتہ کابینہ کمیٹی نے شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی ہے اور اس پر معمول کے طریقہ کار کے مطابق عملدرآمد ہو گا۔جبکہ وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے بھی واضح کیا ہے مسلم لیگ (ن) کے صدر و قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف کا نام تاحال ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں نہیں ڈالا گیا۔اپنے ویڈیو پیغام میں شیخ رشید احمد نے کہا گزشتہ کئی روز سے شہباز شریف کے حوالے سے میڈیا میں شور برپا ہے، ابھی تک ان کا نام ای سی ایل میں نہیں ڈالا گیا کیونکہ کابینہ ڈویژن سے سمری واپس نہیں آئی اور یہ پیر یا منگل تک واپس آئے گی۔ یہ ایسا کیس ہے جس کے 14 ملزمان پہلے ہی ای سی ایل میں شامل ہیں اور شہباز شریف کے خاندان کے 5 ملزمان مفرور ہیں جبکہ شہباز شریف خود نواز شریف کے ضامن ہیں۔شہباز شریف سیدھا لندن نہیں جارہے تھے بلکہ انہیں پہلے قطر میں 15 دن قرنطینہ کرنا تھا پھر برطانیہ جانا تھا جبکہ ہمارے پاس ان کی کوئی میڈیکل رپورٹ نہیں آئی۔ کابینہ ڈویژن سے سمری واپس آنے کے بعد وزارت داخلہ اور وزارت قانون مل کر اس حوالے سے قانونی، آئینی اور آرٹیکل 25 کے مطابق کوئی فیصلہ کریں گی۔واضح رہے قبل ازیں میڈیا رپورٹس سامنے آئی تھیں کہ  وفاقی کابینہ کی منظوری کے بعد وزارتِ داخلہ نے بھی مسلم لیگ(ن)کے صدر اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کا نام ایگز یٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کردیا،نجی ٹی وی کے مطابق وفاقی کابینہ نے شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی منظوری سرکولیشن سمری کے ذریعے دی،کابینہ کی منظوری کے بعد سمری وزارتِ داخلہ کو ارسال کی گئی، جس کے بعد حکام نے مسلم لیگ (ن) کے صدر کا نام ای سی ایل میں شامل کردیا۔وزارتِ داخلہ کے ذرائع کے مطابق شہبازشریف اب ملک سے باہر نہیں جاسکیں گے کیونکہ ان کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا ہے۔اس پر ردعمل میں گزشتہ روز مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان نے عید والے دن آٹا، چینی، بجلی، گیس اور ادویات سستی کرنے کی ہدایت نہیں دی، صرف شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم دیا، کاش وہ چینی، بجلی، گیس، آٹا، دوائی مافیا اور کمیشن خوروں کو گرفتار کرنے کا حکم دیتے۔

وفاقی وزراء 

لاہور(نیوز ایجنسیاں) پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے بیرون ملک جانے کی اجازت نہ دینے کے بعد ڈی جی ایف آئی اے، سیکرٹری داخلہ اور حکومت کیخلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کرنے کی منظوری دیدی۔تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کو عدالتی فیصلہ کے باوجود حکومت کی جانب سے بیرون ملک جانے کی اجازت نہ دینے کے معاملے کے بعد قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر نے ڈی جی ایف آئی اے، سیکرٹری داخلہ اور وفاقی حکومت کے خلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کرنے کی منظوری دیدی۔شہباز شریف نے سینیٹر اور قانونی ماہر اعظم نذیر تارڑ اور امجد پرویز سے مشاورت مکمل کرلی، شہباز کی جانب سے توہین عدالت کی درخواست 17مئی کو لاہور ہائیکورٹ میں دائر کی جائے گی۔یاد رہے کہ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس علی باقر نجفی نے شہباز شریف کو 8ہفتوں کے لیے بیرون ملک جانے کی اجازت دی تھی۔

شہباز شریف

مزید :

صفحہ اول -