کرم تنگی ڈیم کی تعمیر سے قبل تمام اقوام کو اعتماد میں لیا جائے:انصاف لیبر ونگ

کرم تنگی ڈیم کی تعمیر سے قبل تمام اقوام کو اعتماد میں لیا جائے:انصاف لیبر ونگ

  

 بنوں (نمائندہ خصوصی)انصاف لیبر ونگ ساؤتھ ریجن نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ کرم تنگی ڈیم کی تعمیر سے قبل تمام اقوام کو اعتماد میں لیا جائے اور جس علاقے یا ضلع کا نقصان ہوتا ہے اس کا ازالہ کیا جائے تاکہ یہ مسئلہ کاباغ ڈیم پارٹ ٹو نہ بنے جبکہ وزراء اور پارٹی قائدین کی جانب سے ورکروں کا نظر انداز کرنے کا سلسلہ ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے انصاف لیبر ونگ ساؤتھ ریجن کے صدر ظہور الحق،ڈپٹی جنرل سیکرٹری وسینئر رہنما ملک مویز خان جانی خیل،ضلعی صدر فرید اللہ خان،تحصیل نائب صدر سرحد اللہ سرھدی،ماڈل میجنمنٹ سروسز فارم سنٹر کے نائب صدر وسابقہ امیدوار صوبائی اسمبلی فرمنا اللہ میرا خیل ودیگر رہنماؤں نے کہا کہ ڈیم ملک کی اہم ضرورت ہیں اور ڈیموں کی تعمیر سے ہمیشہ ترقی اور زرعی انقلاب آتے ہیں لیکن جس طرح سابق ٹیکنیکل ڈائریکٹر ایری گیشن پیر سید قیصر عباس شاہ نے دلائل کے ساتھ انکشاف کیا ہے کہ اس ڈیم سے صرف84میگاواٹ بجلی پیدا کی جائیگی یہ زرعی نہیں بلکہ پن بجلی منصوبہ ہے جو کہ دریائے کرم کے سرسبز پانی پر بناکر کرم کا پانی تقسیم اور بنوں کے بھٹہ خشت،کرش سٹون انڈسٹری،سرسبزی اور زراعت کو تباہ کرنے کا منصوبہ ہے جس کا فائدہ نہ تو بنوں،نہ لکی مروت اور نہ ہی کرک کو ہوگا لہذا نقصان کی صورت میں ہم ڈیم کی حمایت نہیں کریں گے ملک مویز خان ڈپٹی جنرل سیکرٹری ساؤتھ ریجن نے کہا کہ حکومت کو چاہیئے کہ اس اہم معاملے پر پہلے تمام اقوم کو اعتماد میں لیں اور جو علاقے یا اقوام متاثر ہوتے ہیں انہیں بجلی،روزگار یا انڈسٹرسٹریز کے شکل میں مراعات دی جائیں اور اس قومی مسئلہ نہ بنایا جائے جبکہ پارٹی اور پی ٹی آئی حکومت سے یہ بھی مطالبہ کیا کہ پارٹی امیدواروں کو الیکشن میں کامیاب کرانے کیلئے دن رات محنت کرنیوالے اور مشکل وقت میں پارٹی کیلئے قربانیاں دینے اور وفا کرنے والے پارٹی ورکروں کو نظر انداز کرنے کا سلسلہ ختم کرکے میرٹ پر نظریاتی کارکنوں کوترقیاتی سکیمیں اور ملازمتیوں میں حصہ دیا جائے تاکہ یہ لوگ اپنے اپنے علاقوں میں عوام کی خدمت کرکے آئندہ الیکشن میں پارٹی امیدواروں کی جیت میں کردار ادا کرسکیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -