ملتان، ڈیرہ رحیم یار خان: کرونا حملے تیز، مزید 26افراد جاں بحق: متعدد نئے کیس رپورٹ 

ملتان، ڈیرہ رحیم یار خان: کرونا حملے تیز، مزید 26افراد جاں بحق: متعدد نئے کیس ...

  

ملتان،ڈیرہ، رحیم یار خان، وہاڑی (خصوصی رپورٹر)سٹی رپورٹر، بیورورپورٹ) نشتر ہسپتال ملتان میں عید کے پہلے تین روز کے دوران  کورونا میں   مبتلا 17 مزید   مریض  جاں بحق،اموات کی مجموعی  تعداد 736ہو گئی  زیر علاج کورونا کے مریضوں کی  تعداد 109 ہو گئی،23 مریضوں کی حالت تشویشناک،  شبہ میں 88مریض زیر علاج،کورونا آئی سو لیشن وارڈ مریضوں سے بھر گیا،کورونا آئی سو لیشن کے دس وارڈز میں بستروں کی تعداد 331  ، 249 پر مریض،97 وینٹی لیٹرز  میں سے 16 وینٹی لیٹر خالی, تفصیل کے مطابق فوکل پرسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان ارشد  نے بتایا کہ  نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں عید کے پہلے روز ملتان کی 82 سالہ فخرالنسا،90 سالہ عبدالطیف،45 سالہ پٹھانی مائی،،36 سالہ محمد نواز،75 سالہ سکینہ بی بی،65 سالہ محمد رمضان,55 سالہ زرینہ اور خانیوال کی 55 سالہ سکینہ بی بی اور 60 سالہ ثریا بیگم  نے دم توڑ دیا,دوسرے روز ملتان کی 58 سالہ نور جہاں,80 سالہ منیر خان،40 سالہ فرحت، 49سالہ محمود احمد،اور 80 سالہ حاجی غلام حیدر نے دم توڑ دیا جبکہ گزشتہ روزملتان کی 70سالہ کنیز فاطمہ ,50 سالہ محمد سلیم،اور گجرات کی 43 سالہ راحیلہ بی بی نے دم توڑ دیا ،یوں یکم اپریل 2020  سے 15 مئی 2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 736ہو گئی ہے،جبکہ عید کے تین روز کے دوران مجموعی طور پر 17 افراد نے کورونا کے باعث نشتر ہسپتال میں دم توڑ دیا،ادھر  نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 109ہو گئی ہے جن میں سے 66مریضوں کا تعلق ملتان سے ہے جبکہ زیر علاج 23 مریضوں  کی حالت تشویشناک  ہے،جبکہ کورونا کے شبہ میں 88 مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار  ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 5 ہزار 986 افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 2 ہزار 372 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے، ہیں۔جبکہ ڈیرہ غازیخان میں کرونا کے مزید تین مریض جاں بحق،اموات میں اضافہ سے شہریوں میں خوف و ہراس اس سلسلہ میں فوکل پرسن ڈسٹرکٹ ہسپتال ڈاکٹر خالد تحسین نے بتایا کہ عید کی تعطیلات کے گزشتہ دو روز کے دوران ڈسٹرکٹ ہسپتال میں جام پور کی 68 سالہ بیگم اللہ اور 50 سالہ محمد عارف کرونا سے لڑتے ہو ئے جان کی بازی ہار گئے جبکہ کوٹ چھٹہ کا 28 سالہ نوجوان شکیل الرحمن بھی کرونا کے باعث جاں بحق ہو گیا انہوں نے بتایا کہ ڈسٹرکٹ ہسپتال میں اس وقت کل 41 مریض زیر علاج ہیں جن میں سے 9 مریض وینٹی لیٹرز پر ہیں اور 3 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے انہوں نے مزیدبتایا کہ ٹیسٹ رپورٹس کے مطابق کرونا کے 17 نئے مریض بھی سامنے آ گئے انہوں نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ کرونا ایس او پیز پر سختی سے عمل کریں تاکہ اس وباء سے محفوظ رہ سکیں۔ ادھر عید کے تین روز میں کورونا وائرس نے 5 افراد کی جان لے لی جبکہ کورونا وائرس کی58 افراد میں تصدیق ہوگئیایس او پیز کے تحت گھروں میں آئسولیٹضلع میں کورونا وائرس کی مریضوں کی مجموعی تعداد4911تک پہنچ گئی کورونا کے وار سے ہلاکتوں کی تعداد189تک جا پہنچی۔ تفصیل کے مطابق محکمہ ہیلتھ کی طرف سے دیئے گئے اعداد و شمار کے مطابق کرونا وائرس سے متاثرہ افراد میں دن بدن اضافہ ہوتا جا رہا ہے جبکہ عید کے تین روز کی چھٹیاں اور لاک ڈان کے کی وجہ سے مریضوں کی تعداد میں گزشتہ دنوں کی نسبت واضح کمی آئی۔ گزشتہ تین روز بھی تقریبا 58افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئیسرکاری اعداد و شمار کے مطابق جاری کردہ کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کے نام بالترتیب کچھ یوں ہیں۔محمد علی شوکت علی زینب کرامتحریم بلالمنضور احمدمحمد آصف شاہین رب نوازفہد سلیمانمحمد فرحان محمد افضلصائمہ بی بیام روبانوید احمدلائبہ مصطفیمحمد طارقعائشہ مظہرمحمد یاسینحافظ سجادفرزانہ مجیدمیہالابو بکروجیہہ بی بی نوید ارشادعدیل اشرفرشید احمدمحمد بخشنذیر احمدمحمد عمرنمرہ علی کوریجہعمران حسنفرہافہیمخالد جاویدذولفقار علیرانا مسعود مجیدعفت ثمینہ ماریہ شمسشیراز علیگوہر حسینریحانہ نوازنسرین اخترشازیہ سرورمحمد الیاسفریدہ خانمجام مشتاق احمد گانگاامجدغفورشہزاد اکرمسدرہ بلال محمد طاہرمحمد الیاسزینب منظورعبدالمجیدمحمد اسلم خان عباسی اورمنظوراں بی بی شامل ہیں جنہیں ورثا کی جانب سے شیخ زید ہسپتال لایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے متاثرہ مریضوں کے سوائپ حاصل کرنے کے بعد ان میں وائرس کی تصدیق کردی۔ محکمہ صحت اور ضلعی انتظامیہ نے متاثرہ مریضوں کو ایس او پیز کے تحت گھروں میں ایسو لیٹ کر دیا۔ گزشتہ روز محکمہ صحت سے جاری ہونے والے اعداد و شمار کے مطابق ضلع رحیم یار خان میں کورونا وائرس کے ایکٹو کیسز کی مجموعی تعداد4911 جبکہ اموات کی تعداد 189ہے اور صحت یاب ہونے والے 4121 ہیں 5 افراد شیخ زید ہسپتال آئی سی یو وارڈ6 افراد آر وائی کے ہسپتال اور13افراد شیخ زید ہسپتال پی پی بلاک میں زیرعلاج ہیں جبکہ 577 افراد کو ایس او پیز کے تحت ہوم ایسو لیٹ کر دیا گیا۔ جبکہ  30 سال سے زائد عمر والے افراد کی کورونا ویکسی نیشن کے لیئے رجسٹریشن آج سے شروع ہو گی، حکومت کی جانب سے کوڈ 19 ویکسی نیشن 30 سال سے زائد عمر والوں کی بھی رجسٹریشن کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، اس سلسلے میں 30 سال سے زائد عمر والے افراد  کی رجسٹریشن آج سے شروع ہو گی، شہری اپنے شناختی کارڈ کا نمبر 1166 پر بھیج کر رجسٹریشن کروا سکتے ہیں، اور پھر کوڈ موصول ہونے پر مقررہ تاریخ پر سینٹرز پر جا کر ویکسینیشن کروائیں گے۔ادھر پروگرام مینجر ہیپاٹائٹس اینڈ انفیکشن کنٹرول پروگرام پنجاب کی جانب سے  ہسپتالوں ، قرنطینہ مراکز  اور دیگر مقامات سے کورونا وائرس کے حوالے سے استعمال شدہ سامان کو اکٹھا کرنے اور ضائع کرنے والے حوالے سے نئی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں، ہسپتالوں، قرنطینہ مراکز اور ویکسینیشن کیمپس سے کوڈ 19 کا استعمال شدہ (ویسٹ) سامان مکمل ایس او پیز کے ساتھ اٹھایا جائے گا۔  سامان اٹھانے والے عملے کو پیلے رنگ کی ٹوکریاں  اور کیبل ٹائیز  دی جائیں گی، جنہیں ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کر کے  انتہائی احتیاط کے  ساتھ لے جا کر تلف کیا جائے گا،جبکہ سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر انجم اقبال نے عید کے ایام میں کورونا ویکسینیشن سنٹر،ڈی ایچ کیو ہسپتال ڈائیلسز وارڈ اور کورونا وارڈ کے اچانک دورے کئے دوروں کے دوران انہوں نے شہریوں کو فراہم کی جانیوالی علاج معالجہ کی سہولیات اور ریکارڈ روم کا جائزہ لیا ڈائیلسز سنٹر میں مریضوں کے لواحقین کی شکایات سنیں اور مسائل فوری حل کرنے کا حکم دیا اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر انجم اقبال نے کہا کہ حکومتی ہدایات کے مطابق شہریوں کو علاج معالجہ کی تمام سہولیات فراہم کررہے ہیں ہسپتالوں میں ڈاکٹرز اور عملہ کی کمی پوری کی جارہی ہے شہری ہسپتال آتے وقت کورونا ایس او پیز کو ملحوظ خاطر رکھیں اسی طرح ڈاکٹرز و عملہ کورونا سے بچاو کے لئے تمام تر ہدایات پر عمل کریں۔جبکہ ضلع ملتان کے تمام  کورونا ویکسی نیشن سنٹرز گزشتہ روز 15مئی سے کھول دئے گئے ہیں۔سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر شعیب الرحمان گورمانی نے اس حوالے  میڈ یاسے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ  ویکسی نیشن سنٹرز صبح8 بجے سے رات 8 بجے تک کھلے رہیں گے۔40 سال اور اس سے زائد عمر کے افراد میسج کے ذریعے کوڈ ملنے پر سنٹرز سے ویکسین لگوا سکتے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدایت پر کورونا ویکسی نیشن کا عمل تیز کیا جارہا ہے اور اسسٹنٹ کمشنر سٹی خواجہ عمیر محمود کے ہمراہ قائد اعظم اکیڈمی ویکسی نیشن سنٹر کے دورے کے موقع پر سہولیات میں اضافہ کا فیصلہ کیا گیا ہے۔قائد ویکسی نیشن سنٹر مرد اور خواتین کے لئے دو دو کاونٹرز قائم کر دئیے گئے ہیں۔آج 16 مئی سے قائد اعظم اکیڈمی ویکسی نیشن سنٹر میں کاونٹر کی تعداد8 کردی جائے گی،سی ای او ہیلتھ نے بتایا کہ ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدایت پر ماس ویکسی نیشن سینٹر کے قیام کی تیاریاں بھی جاری ہیں۔شہریوں کے متوقع رش کے پیش نظر ماس ویکسی نیشن سنٹر جلد فعال کردیا جائے گا۔شہری1033 پر کال کرکے کورونا ویکسی نیشن بارے معلومات حاصل کرسکتے ہیں،علاوہ ازیں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے ویکسی نیشن سنٹرز پر کورونا ایس او پیز کے مطابق بھرپور انتظامات کئے گئے ہیں۔ہر ویکسی نیشن سنٹر میں مرد اور خواتین کے لئے الگ الگ  انتظار گاہیں اور آبزرویشن رومز قائم کئے گئے ہیں۔سماجی فاصلہ برقرار رکھتے ہوئے  ویکسی نیشن سنٹرز میں شہریوں کے بیٹھنے کے انتظامات کئے گئے ہیں۔ویکسی نیشن سنٹرز میں محکمہ صحت کے علاوہ پولیس،سول ڈیفنس کا عملہ، محکمہ تعلیم کی طرف سے ڈیٹا انٹری آپریریٹر اور صفائی ستھرائی کے لئے ویسٹ منیجمنٹ کمپنی کے ورکرز تعینات کئے گئے ہیں۔ ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر سٹی خواجہ عمیر محمود نے  بوسن روڈ پر قائم قائد ویکسی نیشن سنٹر کا دورہ کیا۔اسسٹنٹ کمشنر  سٹی نے انتظامات کا جائزہ لیا اور تعینات سٹاف کی حاضری چیک کی۔دریں اثناء  صادق کے رہائشی 16 سالہ سنی کو کورونا وائرس میں مبتلا ہونے پر ورثا نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود وہ جانبر نہ ہو پایا اور دم توڑ گیا انتظامیہ نے کورونا ایس او پیز کے تحت آبائی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا۔

کرونا

مزید :

صفحہ اول -