موٹروے پولیس کا کارنامہ، دس روز قبل لاپتہ ہونے والی ذہنی معذور بچی کو والدین سے ملوانے کی ایسی روداد کہ آپ بھی داد دیں گے 

موٹروے پولیس کا کارنامہ، دس روز قبل لاپتہ ہونے والی ذہنی معذور بچی کو والدین ...
موٹروے پولیس کا کارنامہ، دس روز قبل لاپتہ ہونے والی ذہنی معذور بچی کو والدین سے ملوانے کی ایسی روداد کہ آپ بھی داد دیں گے 

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)موٹروے پولیس سنٹرل زون نے دس دن سے لاپتہ ذہنی معذور لڑکی کو والدین سے ملوا دیا ،موٹر وے اہلکاروں نے لاپتہ ذہنی معذور بچی کے والدین کو تلاش کرنے کے لئے ایسا راستہ اختیار کیا کہ ہر کوئی جان کر فرض شناس اہلکاروں کو داد دینے پر مجبور ہو گیا ۔

تفصیلات کے مطابق دس روز قبل لاپتا ہونے والی نوجوان ذہنی معذور لڑکی مل گئی ،موٹروے پٹرولنگ افسران نے ایف ایف سی چوک کے قریب ابنارمل لڑکی کو سڑک کے اوپر چلتے دیکھا تو ڈیوٹی پر موجود اہلکاروں کو راہ چلتی بچی کی ذہنی حالت پر شک ہوا جس پر انہوں نے اپنی گاڑی سڑک کی ایک جانب کھڑی کی اور تیز رفتار گاڑیوں کے درمیان سے لڑکی کو بحفاظت دوسری سائڈ پر لے گئے ،افسران نے لڑکی کو سڑک سے نیچے کر کے  اس کے گھر والوں کے متعلق پوچھ گچھ کی۔

ذہنی معذور لڑکی افسران کو صرف اپنا نام  اور  رہائشی کالونی اسلام نگر  کا نام ہی بتا سکی۔موٹر وے پولیس کے افسران نے متعلقہ کالونی اسلام نگر میں بچی کے ورثاء ڈھونڈنے کے لئے مختلف مساجد میں اعلانات  کروائے اور چند گھنٹوں کی تگ ودو کے بعد افسران بچی کے لواحقین کو ڈھونڈنے میں کامیاب ہو گئے۔

ترجمان سنٹرل زون کے مطابق لڑکی کے والد نے بتایا کہ اس کی بیٹی کا ذہنی توازن خراب ہے اور وہ دس دن سے اس کو ڈھونڈھ رہے تھے۔لڑکی کو ضلعی پولیس اور گواھان کی موجودگی میں  اس کے والد کے حوالے کیا گیا، لڑکی کے  والد نے موٹر وے پولیس  کی فرض شناسی کو سراہا اور  شکریہ ادا کیا ۔دوسری طرف ڈی آئی جی سنٹرل زون مسرور عالم کولاچی نے افسران کو اچھا کام کرنے پرشاباش دیتے ہوئے کہا کہ موٹروے اہلکار شہریوں کی حفاظت میں ہمیشہ مستعد رہتے ہیں ۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -