15303سکولوں میں آج انتخابات،کانٹے دار مقابلے

15303سکولوں میں آج انتخابات،کانٹے دار مقابلے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان (نیوزرپورٹر) پنجاب کی تاریخ میں پہلی مرتبہ 15303 گرلز و بوائز مڈل و ہائی سکولوں میں سٹوڈنٹ کونسلوں کے انتخابات ہونگے 30 لاکھ سے زائد ووٹرز آج 61212 عہدیداروں کا انتخاب کریں گے۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب کے سرکاری تعلیمی اداروں میں طلبا و طالبات کو فیصلہ سازی، مشاورت، انتظامی معاملات پر دسترس، جمہوری اقدار سے (بقیہ نمبر7صفحہ7پر)

متعارف کرانے اور ہم نصابی سرگرمیوں میں عملی شرکت یقینی بنانے کے لیے سٹوڈنٹ کونسلوں کے انتخابات آج (16 مئی) کو منعقد کیے جا رہے ہیں۔ پنجاب کے 15303 گرلز و بوائز مڈل و ہائی سکولوں میں ہونے والے اس سب سے  بڑے انتخابی عمل میں 3.47 ملین ووٹرز 61212 صدور، نائب صدور، جنرل سیکرٹریز اور فنانس سیکرٹریز کے عہدوں کے لیے امیدواروں کا انتخاب کریں گے۔ سٹوڈنٹ کونسلوں کے انتخابات میں صدر، نائب صدر، جنرل سیکرٹری، فنانس سیکرٹری اور کلاس نمائندگان منتخب کیے جائیں گے۔ ایک سالہ مدت کے لیے ہونے والے ان انتخابات میں طلبا وطالبات کی کافی گہماگہمی اور جوش و خروش دیکھنے میں آ رہا ہے۔ گزشتہ روز ختم ہونے والی انتخابی مہم میں طلبا و طالبات گروپ کی صورت میں اپنے اپنے پسندیدہ امیدواروں کے حق میں مہم چلاتے رہے۔ ان انتخابات کا انعقاد مقرر کیے گئے الیکشن کمشنرز کی نگرانی میں کیا جارہا ہے۔ سیکرٹری اسکول ایجوکیشن  پنجاب کے مطابق اسکول کی سطح پر انتخابات کے عمل میں شریک ہونا بچوں کی تربیت کا حصہ ہے، انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب کے اس اقدام سے طلبا و طالبات آئندہ کی باشعور اور ذمہ دار نسل ثابت ہوں گے۔ واضح رہے کہ تعلیمی اداروں میں سٹوڈنٹ کونسلوں کی تشکیل کا منصوبہ سب سے پہلے محکمہ اسکول ایجوکیشن جنوبی پنجاب کے سیکریٹری ڈاکٹر احتشام انور نے وضع کیا جس کے تحت 2021 میں پہلی مرتبہ جنوبی پنجاب کے سرکاری سکولوں میں سٹوڈنٹ کونسلیں تشکیل دی گئی تھیں، 2022 میں دوسری اور 2023 میں تیسری مدت کے انتخابات بھی جنوبی پنجاب کی سطح پر منعقد کیے گئے تاہم  اب پہلی مرتبہ حکومت پنجاب نے صوبہ کی سطح پر سٹوڈنٹ کونسلیں تشکیل دینے کے احکامات جاری کیے ہیں۔