اساتذہ کیلئے ٹیچر لائسنس جاری کرنیکا فیصلہ

اساتذہ کیلئے ٹیچر لائسنس جاری کرنیکا فیصلہ

  

                                   لاہور(ذکاءاللہ ملک)محکمہ تعلیم نے صوبہ بھر میں سابقہ ادوار میں ہونیوالی بوگس بھرتیوں کے خاتمے کےلئے اساتذہ کےلئے ٹےچرزلائسنس جاری کرنے کا فیصلہ کرلیا،لائسنس پاکستان میڈیکل اینڈ ڈےنٹل کونسل ، پاکستان/پنجاب بارکونسلز،پاکستان انجینئرنگ کونسل کے پیٹرن پر بنائے جائیں گے،وزیراعلیٰ پنجاب نے سیکرٹری سکولز کو ایک ماہ میں فزیبیلٹی رپورٹ تیار کرنے کا حکم دیدیا ہے تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم نے صوبہ بھر میں 76ہزار سرکاری سکولوں کے4 لاکھ50ہزار اساتذہ کا تمام ڈیٹا اکٹھا کیا ہے،جس میں بوگس بھرتیوں کی ایک بہت بڑی تعداد سامنے آئی ہے جس کے بعد محکمہ تعلیم نے ٹےچرزلائسنس جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے ،اس حوالے سے گزشتہ روز سکولز اےجوکےشن ڈیپارٹمنٹ میں ایک اعلیٰ سطح کا اجلاس بھی منعقد ہو اذرائع نے بتایا ہے کہ سابقہ ادوار میں سرکاری سکولوں میں اساتذہ تنظیموں کے دباﺅ اور سیاسی پریشرکی بدولت بوگس بھرتیاں کی گئی تھیں،جس کی ایک خفیہ رپورٹ آنے کے بعد ٹےچرز لائسنس جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ذرائع نے بتایا ہے کہ محکمہ تعلیم کے تمام ای ڈی اوز کو بھی ایک مراسلہ جاری کیا گیا ہے جس میں انکو اساتذہ کی اپ گریڈ کی گئی لسٹیں فوری سیکرٹری تعلیم کے دفتر میں بھجوانے کی ہدایت کی گئی ہے ذرائع کے مطابق ٹیچرز لائسنس بننے سے صوبہ بھر میں اساتذہ کی سکولوں میں حاضری بھی سو فیصد یقینی بنائی جاسکے گی،جبکہ لائسنس یافتہ اساتذہ ہی تقررو تبالے سمیت ترقی کےلئے اہل ہونگے۔ذرائع نے یہ بھی انکشاف کیا ہے کہ جعلی اور سیاسی اثرو رسوخ کی بدولت ہزاروں اساتذہ ایسے ہیں جن کا محکمے کی فائلوں میں کوئی ریکارڈنہیں اورسرکاری خزانے سے ماہانہ لاکھوں تنخواہیں بھی وصول کرتے ہیں، مگرعملی طور پر انکا کوئی وجودہی نہیں ،جس کی بدولت محکمہ تعلیم کو ان جعلی اساتذہ کے باعث جہاں ہر ماہ کروڑوں روپے کا نقصان ہو رہا ہے وہاں معیار تعلیم میں بھی کوئی خاطر خواہ بہتری نہیں آرہی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -