خون میں پھیپھڑوں سے جسم کے باقی حصوں کو آکسیجن فراہم کرنے والے ہیمو گلوبن نامی لحمیات اور چقندر میں پائے جانے والے لحمیات کا 50 تا 60 فیصد آپس میں ملتا جلتا ہے ‘ تحقیق

خون میں پھیپھڑوں سے جسم کے باقی حصوں کو آکسیجن فراہم کرنے والے ہیمو گلوبن ...

  

لندن (بیورورپورٹ) سویڈن کی یونیورسٹی کے سائنس دانوں نے تجربہ کیا ہے کہ خون میں پھیپھڑوں سے جسم کے باقی حصوں کو آکسیجن فراہم کرنے والے ہیمو گلوبن نامی لحمیات اور چقندر میں پائے جانے والے لحمیات کا 50 تا 60 فیصد آپس میں ملتا جلتا ہے سائنس دانوں کا خیال ہے کہ اس نئی دریافت سے خون میں کمی اور سرطان میں مبتلا افراد کی خون کی ضروریات پوری کرنے میں مدد ملے گی اس سے پیشتر بھی بعض جڑی بوٹیوں میں ہیموگلوبن سے مشابہہ لحمیات دریافت کیے گئے تھے لیکن پہلی دفعہ چقندر اور انسانی خون کے لحمیات میں اس قدر مشابہت پائی گئی ہے سائنس دان اب اس کے اثرات کے بارے میں خنزیروں پر تجربہ کر رہے ہیں اور اگر یہ کامیاب ہو گیا تو تین سال بعد اس کے دیگر تجربات کا آغاز کیا جائے گا مذکورہ تجربے سے وابستہ نتائج پلانٹ اینڈ سیل فیزیولوجی نامی جریدے میں شائع کیے گئے ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -