مکئی کے کاشتکارفصل کو برداشت کرنے کے بعد ذخیرہ کرنے سے قبل گودام کو کیڑوں مکوڑوں سے اچھی طرح پاک صاف کر لیں، زرعی ماہرین

مکئی کے کاشتکارفصل کو برداشت کرنے کے بعد ذخیرہ کرنے سے قبل گودام کو کیڑوں ...

  

 فیصل آباد (بیورورپورٹ) ایوب زرعی تحقیقاتی ادارہ فیصل آباد کے مکئی کے زرعی ماہرین نے مکئی کے کاشتکاروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ فصل کو برداشت کرنے کے بعد ذخیرہ کرنے سے قبل گودام کو کیڑوں مکوڑوں سے اچھی طرح پاک صاف کر لیں تاکہ ذخیرہ شدہ جنس کو نقصان سے محفوظ رکھا جا سکے۔ انہوں نے بتایا کہ سونڈ والی سسری کا پروانہ اور سنڈی دونوں ہی مکئی کو نقصان پہنچاتے ہیں۔ یہ دانوں کو اندر سے کھا کر کھوکھلا کر دیتے ہیں۔ آٹے کی سسری اور کھپرا مکئی کے دانوں کو کھا کر نقصان کرتے ہیں۔ دانوں کا پروانہ گوداموں میں مکئی کو سب سے زیادہ نقصان پہنچانے والا کیڑا ہے۔ اس کی سنڈیاں مکئی کے دانوں کو کھا کر نقصان کرتی ہیں۔ یہ سنڈیاں دانوں میں سوراخ کر کے اندر داخل ہو جاتی ہیں اور کویا بننے تک دانوں میں ہی رہتی ہیں۔ گودام کو کیڑوں سے محفوظ رکھنے کے لئے انہیں صاف ستھرا رکھیں، فرش، دیواروں اور چھتوں میں موجود د دراڑیں یا سوراخ اچھی طرح بند کر دیں۔ گوداموں میں پہلے سے موجود خالی بوریوں میں پناہ لئے ہوئے کیڑوں کے تدارک کے لئے گوداموں کو حسب ضرورت گرم کریں۔ ایسے گودام جو بند کیے جا سکیں ان میں ایگٹاکسن کی دھونی بحساب 25 تا 30 گولیاں فی ہزار مکعب فٹ حجم کریں۔ اس عمل کے دوران پرانی بوریاں بھی اس گودام میں رکھ دیں تاکہ ان میں موجود کھپرے، سسری کے انڈے اور بچے وغیرہ مر جائیں۔

محکمہ زراعت (توسیع و پیسٹ واننگ) کے مقامی فیلڈ عملہ کے مشورہ سے سفارش کردہ زہر گودام میں سپرے کریں۔ غلہ کی ذخیرہ اندوزی کے بعد یہ زہریں حسب ضرورت دیواروں اور بوریوں پر بھی سپرے کی جا سکتی ہیں۔ کیڑوں کے انسداد کے لئے گوداموں میں زہریلی گیس کا سپرے بھی کیا جا سکتا ہے۔ اس مقصد کے لئے گوداموں کی کھڑکیاں اور روشن دان اچھی طرح بند کر کے ایگٹاکسن یا ایلومینیم فاسفائیڈ کی 25 تا 30 گولیاں فی ہزار مکعب فٹ حجم رکھ دیں اور دروازہ اچھی طرح بند کر دیں۔ گودام کو ایسی حالت میں کم از کم 7 دن تک اچھی طرح بند رکھیں۔ زہریلی دھونی کا عمل مکمل ہونے کے بعد گودام کھول کر ہوا لگوائیں اور اس میں غلہ سٹور کر لیں۔#/s#

مزید :

کامرس -